بینائی سے محروم 16افراد انصاف سے بھی محروم، علاج کیلئے مخیر حضرات سے تعاون کی اپیل 

بینائی سے محروم 16افراد انصاف سے بھی محروم، علاج کیلئے مخیر حضرات سے تعاون کی ...

  

ملتان (وقا ئع نگار)  ملتان لئیق رفیق ہسپتال میں غلط آپریشن کے بعد بینائی متاثر ہونے والے 16  مریض تاحال علاج اور انصاف دونوں سے محروم چلے آرہے ہیں۔ڈاکٹر اور ہسپتال کے خلاف دی جانے والی درخواست ردی کی نوکری کی نذر۔متاثرین شدید  پریشان۔ ہیلتھ کئیر کمیشن کی انکوائری رپورٹ پانچ روز گزرنے پر بھی مکمل نہ ہو سکی،وزیر اعلی کا نوٹس بھی کام نہ آیا،مریضوں کی حالت دن بدن مزید خراب ہونے لگی تفصیل کے مطابق نجی ہسپتال لئیق رفیق ہسپتال سے 20 مارچ کو 16 افراد کی ایک ایک آنکھ کی  سرجری کی گئی۔جو ایک روز بعد ہی خراب ہوگئی۔اور مریضوں میں انفیکشن پھیلنے لگا۔پس اور پانی بہنے کی وجہ سے سر میں بہت درد ہے۔ متاثرہ مریضوں کو علاج معالجہ کی سہولت نا ملنے پر  سیکرٹری ہیلتھ پنجاب کی جانب سے ہدایات کے بعد متاثرہ مریضوں کو نشتر ہسپتال بلایا گیا تھا جہاں 08 مریضوں نے کورونا کے خوف۔ مزید آپریشن کروانے سے پہلے تحریری طور پر لکھ کر دینے کی شرط عائد کرنے کے خوف سے اور نشتر ہسپتال سے ادویات  اور علاج کی بہتر سہولیات نہ ملنے پر علاج کروانے سے انکار کر دیا تھا جبکہ 01 مریضہ شفیقہ نے اپنی رضامندی سے  آنکھ کا آپریشن کروا لیا۔تمام صورت اور مریضوں کا طبی معائنہ کرنے کے بعد  نشتر ہسپتال کے شعبہ امراض چشم کے ڈاکٹروں نے  متاثرہ مریضوں کی ایک ایک آنکھ کی بینائی واپس آنا اب ناممکن قرار دے دیا۔جس کے بعد مریضوں اور لواحقین میں پریشانی اور بے چینی نے گھر کرلیا۔یاد رہے بینائی سے محروم افراد نے نجی ہسپتال لئیق رفیق انتظامیہ اور آئی سرجن ڈاکٹر حسنین مشتاق کے خلاف کارروائی کرنے کیلئے  ہیلتھ کیئر کمیشن پنجاب کو تحریری طور پر درخواست  دی تھی۔مگر تاحال درخواست کے حوالے سے کچھ بھی نا بن سکا۔حالانکہ وزیر اعلی پنجاب کے نوٹس لینے پر  ہیلتھ کیئر کمیشن پنجاب کی ٹیم نے ملتان آکر لیئق رفیق ہسپتال کا آپریشن تھیٹر سیل کر دیااور وہاں سے تمام متعلقہ ریکارڈ بھی حاصل کرلیا تھا۔ٹیم کے جانے کے بعد سی ای او پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن ڈاکٹر ثاقب عزیز نے اپنی سات رکنی ٹیم کے ہمراہ ملتان میں واقع  لیئق رفیق ہسپتال کا دورہ کیااور وہاں تمام صورت حال کا تفصیلی جائزہ بھی لیا۔جس پر پانچ روز گزرنے کے باوجود کوئی فیصلہ نا ہوسکا۔ صوبائی و مقامی حکام  بینائی سے محروم افراد کو دلاسے دیکر کام چلا رہے ہیں۔واضح رہے ملتان ڈویژن کی جانب سے بھی متاثرین کی تاحال کوئی داد رسی نہیں ہوئی ہے۔ اور نہ ہی سیکرٹری ہیلتھ پنجاب اس حوالے سے مریضوں سے ٹیلی فونک رابطہ کیا۔مریض اپنی مدد آپ کے تحت ایک شہر سے دوسرے شہر میں علاج کیلئے جار رہے ہیں۔کئی مریضوں نے تو مخیر حضرات سے تعاون کی درخواست کی ہے۔

لئیق  رفیق ہسپتال

مزید :

صفحہ اول -