شکاری حسینہ نے جانوروں کی لاشوں سے کمائی شروع کردی مگر کیسے؟ 

شکاری حسینہ نے جانوروں کی لاشوں سے کمائی شروع کردی مگر کیسے؟ 
شکاری حسینہ نے جانوروں کی لاشوں سے کمائی شروع کردی مگر کیسے؟ 

  

پراگ(مانیٹرنگ ڈیسک) یورپی ملک جمہوریہ چیک کی ایک ’شکاری حسینہ‘ نے جانوروں کی لاشوں کے ساتھ نیم برہنہ تصاویر بنا کر آمدنی کمانی شروع کر دی، جس پر جانوروں کے حقوق کے کارکن سراپا احتجاج ہو گئے۔ ڈیلی سٹار کے مطابق اس خوبرو لڑکی کا نام میکائیلہ فیالووا ہے جو پیشہ ور شکاری ہے اور کئی سالوں سے مختلف ممالک میں شکار کے لیے جا چکی ہے۔ اب تک وہ ریچھ، شیر اور چیتے کئی جانوروں کا شکار کر چکی ہے۔ پہلے وہ ان مردہ جانوروں کے ساتھ اپنی تصاویر بنا کر انسٹاگرام اور دیگر سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پر پوسٹ کرتی تھی تاہم اب اس نے ان تصاویر سے رقم کمانے کے لیے ’اونلی فینز‘ (OnlyFans) پر اکاﺅنٹ بنا لیا ہے۔ 

رپورٹ کے مطابق میکائیلہ اب اپنے شکار کیے گئے جانوروں کے ساتھ مختصر لباس میں بندوق اٹھائے تصاویر بناتی اور اونلی فینز پر پوسٹ کرتی ہے جہاں لوگ ماہانہ 13پاﺅنڈ (تقریباً 2700روپے) سبسکرپشن فیس ادا کرکے اس کی تصاویر دیکھتے ہیں۔ رپورٹ کے مطابق اونلی فینز پر میکائیلہ کے سبسکرائبر کی تعداد ہزاروں میں پہنچ چکی ہے اور اب وہ اس پلیٹ فارم سے ماہانہ اوسطاً 12ہزار پاﺅنڈ (تقریباً 25لاکھ روپے)کما رہی ہے۔ 

جانوروں کے حقوق کے لیے کام کرنے والے کارکن اس اقدام پر میکائیلہ کو کڑی تنقید کا نشانہ بنا رہے ہیں اور اس سفاک اور بے رحم انسان جیسے القابات دے رہے ہیں تاہم میکائیلہ کا کہنا ہے کہ ”میں جانوروں کی فلاح اور دیکھ بھال کے لیے رقم عطیہ کرتی رہتی ہوں۔ اونلی فینز پر یہ پیج بنانے کا مقصد بھی یہی ہے کہ میں زیادہ سے زیادہ رقم ویٹرنری کیئر کے لیے اکٹھی کر سکوں۔ چنانچہ میں اونلی فینزپر زیادہ سے زیادہ تصاویر پوسٹ کرتی رہوں گی تاہم جانوروں کے تحفظ میں اپنا کردار ادا کر سکوں۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -