پنجاب میں پولیس اور عوامی تحریک کے کارکنوں میں جھڑپیں ،55زخمی،چھ یر غمال

پنجاب میں پولیس اور عوامی تحریک کے کارکنوں میں جھڑپیں ،55زخمی،چھ یر غمال
پنجاب میں پولیس اور عوامی تحریک کے کارکنوں میں جھڑپیں ،55زخمی،چھ یر غمال

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

گوجرانوالہ، لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) پنجاب کے مختلف علاقوں میں پاکستان عوامی تحریک کے کارکنوں اور پولیس کے درمیان جھڑپوں میں اعلی پولیس اہل کاروں سمیت 55 اہل کار زخمی ہوگئے جبکہ عوامی تحریک کے کارکنوں نے چھ اہلکاروں کو یرغمال بنا لیا ۔ تفصیلات کے مطابق گوجرانوالہ میں جی ٹی روڈ ٹول پلازہ پر پولیس اورعوامی تحریک کے کارکنوں کے درمیان تصادم کے نتیجے میں اے ایس آئی سمیت 55 پولیس اہلکار اور چھ کارکنان زخمی ہوگئے۔پولیس کے مطابق جی ٹی روڈ ٹول پلازہ پر پولیس کی بھاری نفری سیکیورٹی کیلئے تعینات کی گئی تھی، اس دوران عوامی تحریک کے کارکنوں کی بڑی تعداد وہاں پہنچی اوراسلام آباد جانے سے روکنے پر مشتعل کارکنوں نے حملہ کرکے اے ایس آئی سمیت 55 اہلکاروں کو شدید زخمی کردیا۔پولیس کی جوابی کارروائی میں چھ کارکن بھی زخمی ہوگئے، زخمیوں کو طبی امداد کیلئے ڈی ایچ کیو منتقل کردیا گیا، مشتعل مظاہرین نے ٹول پلازہ اور گاڑیوں کے ڈنڈوں سے شیشے توڑ دیئے تاہم کوئی گرفتاری عمل میں نہیں آئی۔ علاوہ ازیں لاہور میں طاہر القادری کی رہائش گاہ کے باہر چھ پولیس اہلکاروں کو یرغمال بنا لیاگیا،یرغمال بنائے جانے والے اہلکاروں میں ایک سب انسپکٹر بھی شامل ہیں،کارکنوں نے اہلکاروں کو تشدد کا نشانہ بنایا اور ان سے دستاویزات ، موبائل فون چھین لیے۔طاہر القادری کی سیکیورٹی نے چاروں اہلکاروں کو محفوظ مقام پر منتقل کر دیا ہے اور موقف اختیار کیا ہے کہ ابتدائی تحقیقات کے بعد چاروں اہلکاروں کو رہا کر دیا جائے گا۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -