اسرائیلی فوجیوں کی گری ہوئی حرکتیں جاری

اسرائیلی فوجیوں کی گری ہوئی حرکتیں جاری
اسرائیلی فوجیوں کی گری ہوئی حرکتیں جاری

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

یروشلم (نیوز ڈیسک) فلسطین کو بربریت کا نشانہ بنانے والے اسرائیلی فوجیوں کی ابتر ذہنی حالت کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ وہ فلسطینیوں کے مقبوضہ گھروں میں قابل اعتراض تصاویر بنارہے ہیں، دیواروں پر گالیاں لکھ رہے ہیں اور گھروں کے اندر غلاظت پھیلا رہے ہیں۔

غزہ کے باون سالہ بزرگ شہری احمد اودت نے بتایا کہ اسرائیل کا مبینہ حملہ شروع ہونے کے بعد رات کے ایک بجے جب انہوں نے فوجیوں کو اپنے گھر کی طرف بڑھتے دیکھا تو سارا خاندان گھر چھوڑ کر جان بچانے کی فکر میں نکل کھڑا ہوا۔ عارضی جنگ بندی کے بعد جب وہ گھر واپس آیا تو ہر طرف ٹوٹ پھوٹ کے مناظر تھے۔ اس کے گھر میں موجود چار ٹیلی ویژن، فرج، کلاک اور کمپیوٹر کو چھت سے گرا کر پاش پاش کردیا گیا تھا۔ فرنیچر کو توڑ پھوڑ دیا گیا تھا اور دیواروں پر حماس، فلسطین اور مسلمانوں کے خلاف نعرے اور گالیاں لکھی گئی تھیں اور بدکردار اسرائیلی فوجی اس کے گھر پر قبضے کے دوران بیت الخلاءکی بجائے کمروں کے فرش اور صوفوں کے اوپر ہی رفع حاجت کرتے رہے تھے سارا گھر بول وبراز کی بدبو سے بھرا پڑا تھا۔ احمد کا کہنا ہے کہ اسرائیلی فوجیوں نے جن گھروں پر بھی قبضہ کیا اسے دیکھ کر یہی لگتا ہے کہ یہاں انسانوں کی بجائے کچھ دن تک جانوروں نے قیام کیا ہے۔