سمندر کے بیچوں بیچ جاپان کو چین کی جانب سے لگائی گئی ایسی خفیہ چیز مل گئی کہ ہنگامہ برپاہوگیا، ایسی کیا چیز ہے کہ دونوں ممالک جنگ کے دہانے پر آگئے؟ جان کر آپ بھی پریشان ہوجائیں گے

سمندر کے بیچوں بیچ جاپان کو چین کی جانب سے لگائی گئی ایسی خفیہ چیز مل گئی کہ ...
سمندر کے بیچوں بیچ جاپان کو چین کی جانب سے لگائی گئی ایسی خفیہ چیز مل گئی کہ ہنگامہ برپاہوگیا، ایسی کیا چیز ہے کہ دونوں ممالک جنگ کے دہانے پر آگئے؟ جان کر آپ بھی پریشان ہوجائیں گے

  

ٹوکیو (نیوز ڈیسک)جاپان نے بحیرہ مشرقی چین میں واقع ایک چینی تیل کے کنویں پر نصب ایک ایسی چیز کی موجودگی کا دعویٰ کردیا ہے کہ دونوں ممالک میں جاری کشیدگی آخری حدوں کو چھونے لگی ہے اور خطے کے امن کے لئے سنگین خطرات پیدا ہوگئے ہیں۔

ویب سائٹ آر ٹی کی رپورٹ کے مطابق جاپانی حکام نے دعویٰ کیا ہے کہ چین نے متنازعہ علاقے میں واقعے تیل کے کنویں پر ملٹری راڈار لگارکھا ہے اور شک ظاہر کیا ہے کہ چین اس تنصیب کو دفاعی مقاصد کے لئے استعمال کررہا ہے، جس کا مقصد متنازعہ سمندری علاقے کو اپنی ملکیت قرار دینا ہے۔ جاپانی وزارت خارجہ کے ترجمان کی جانب سے گزشتہ روز جاری کئے گئے ایک بیان میں کہا گیا کہ چین سے تیل کے کنویں پر نصب فوجی راڈار کے بارے میں وضاحت طلب کرلی گئی ہے، جبکہ جاپان کی جانب سے اس واقعے پر باقاعدہ احتجاج بھی کیا گیا ہے۔

دہشت گردی کے خاتمے، علاقے کی ترقی کے لئے جنرل راحیل شریف کا کردار قابل تعریف ہے: چینی میڈیا

اس واقعہ سے چند دن قبل ہی جاپان کی جانب سے اس بات پر بھی شدید احتجاج سامنے آچکا ہے کہ چین کا ایک فوجی بحری جہاز چینی ماہی گیروں کی تقریباً 230 کشیتوں کی حفاظت کے لئے متنازعہ علاقے میں گشت کرتا رہا۔ دونوں ممالک کے درمیان بحیرہ مشرقی چین میں واقع سینکاکو جزائر کی خود مختاری وجہ تنازعہ بنی ہوئی ہے اور حال ہی میں اس کشیدگی میں خاصا اضافہ ہوا ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ علاقہ تیل اور گیس کی دولت سے مالا مال ہے اور یہی وجہ ہے کہ دونوں ممالک میں سے کوئی بھی اس کی ملکیت کے دعوے سے پیچھے ہٹنے کو تیار نہیں ہے۔ چین پر دباﺅ بڑھانے کے لئے امریکہ بھی جاپان کی مدد کو آ گیا ہے، جس کے بعد صورتحال مزید خطرناک ہو گئی ہے۔

مزید : بین الاقوامی