میکسیکو، طوفان سیلاب اور مٹی کے تودے گرنے سے ہلاکتوں کی تعداد 38ہو گئی

میکسیکو، طوفان سیلاب اور مٹی کے تودے گرنے سے ہلاکتوں کی تعداد 38ہو گئی

میکسیکوسٹی(آن لائن)میکسیکو کے مشرقی علاقوں میں سمندری طوفان کے بعد سیلاب اور مٹی کے تودے گرنے سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد 38 ہوگئی ہے۔سمندر طوفان ارل نے سب سے زیادہ ریاست پوئبلا کو متاثر کیا جہاں حکام کے مطابق 28 ہلاکتیں ہوئی ہیں جبکہ مزید دس افراد ویراکروز ریاست میں ہلاک ہوئے ہیں۔اس سے قبل چھ افراد کی ہلاکت کی تصدیق کی گئی تھی۔سمندر طوفان کیریبیئن میں تباہی مچانے کے بعد گذشتہ دنوں بیلائز کی ساحلی پٹی سے ٹکرایا تھا۔ساحل سے ٹکرانے کے بعد طوفان کی شدت میں کمی آئی تاہم اس نے میکسیکو میں اپنے تباہی کے اثرات چھوڑے ہیں۔ریاست پوئبلا کا دور افتادہ قصبہ ہوانچنانگو سب سے زیادہ متاثرہ ہوا ہے جہاں مٹی کے تودے مکانوں پر گرنے سے سب سے زیادہ ہلاکتیں ہوئی ہیں۔حکام کے مطابق ہوانچنانگو میں پہاڑی کے گرنے ایک گاؤں تباہ ہوگیا۔ غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق میئر گیبریئل الواراڈو کا کہنا ہے کہ ’ ہوانچنانگو میں جو کچھ ہمارے لوگوں کے ساتھ ہوا یہ ایک سانحہ ہے۔علاقے میں تیز باܱشیں جاری ہیں جس کے باعث حکام نے دارالحکومت میکسیکو سٹی سے ملانے والی مرکزی شاہراہ کے کچھ حصے کو بند کر دیا ہے۔گذشتہ ہفتے ہیئٹی اور ڈومینک ربپلک میں طوفان اور شدید موسم سے نو افراد ہلاک ہوئے تھے۔

مزید : عالمی منظر