متحدہ سنی محاذ کا اجلاس،تمام مکاتب فکر کا مشترکہ کنونشن بلانے کا اعلان

متحدہ سنی محاذ کا اجلاس،تمام مکاتب فکر کا مشترکہ کنونشن بلانے کا اعلان

لاہور(خبر نگار خصوصی)متحدہ سنی محاذ پاکستان نے اپنادائرہ کار وسیع کرکے تمام مکاتب فکر کے رہنماؤں پر مشتمل ’’رابطہ کمیٹی ‘‘کے قیام اور دستور پاکستان کی بالادستی اور عمل داری کو اپنا بنیادی مقصد قراردیا ہے جس کے لئے مشترکہ لائحہ عمل طے کرنے کی غرض سے عید الاضحی کے بعدتمام مکاتب فکر کے دینی رہنماؤں کا مشترکہ کنونشن بلانے کا فیصلہ کیا ہے یہ فیصلہ گزشتہ روز جامع مسجد خضریٰ سمن آباد لاہور میں متحدہ سنی محاذے کنونیر مولانا عبدالرؤف فاروقی کی زیر صدارت ہونے والے اجلاس میں کیا گیا ،جس میں مولانا زاہدالراشدی،مولانا عبدالمالک خان ،حافظ عاکف سعید،قاری محمد زوار بہادر،مولاناعبدالرؤف ملک،پیر محمد محفوظ مشہدی ، پروفیسر عبدالرحمن لدھیانوی،عبداللطیف خالد چیمہ ،سردار محمد خان لغاری،مولانا محمد اشرف طاہر ،مولانا عزیزالرحمن ثانی،مولاناقاری جمیل الرحمن اختر، مولا نامخدوم منظور احمداوردیگرحضرات نے شرکت کی ،اجلاس میں ایک قرارداد میں کہا گیا ہے کہ پاکستان کے دستور کو سبوتاژ کرنے اور پاکستان کے نظریاتی تشخص کو کمزور کرنے کے لئے سیکولر حلقوں کی سازشیں انتہاکو پہنچ گئی ہیں جن کا مقابلہ کرنا دینی حلقوں کی مشترکہ ذمہ داری ہے اور اس مقصد کے لئے چار عشرے قبل قائم ہونے والے متحدہ سنی محاذپاکستان کو متحرک کرنے اور اسے اہلسنت کے تمام مکاتب فکر پر مشتمل ازسرنوتشکیل کا فیصلہ کیا گیا اور اس کے لئے مولانا عبدالرؤف فاروقی کومستقل رابطہ سیکرٹری منتخب کیا گیا جبکہ مولانا زاہدالراشدی ،عبداللطیف خالد چیمہ،مولانا محمد اشرف طاہر ،مولاناعبدالمالک خان،حافظ عاکف سعید،پیر محمد محفوظ مشہدی،قاری محمد زوار بہادر،سردار محمدخان لغاری،پروفیسر عبدالرحمن لدھیانوی،قاری عبدالمتین اصغر،حافظ عبدالوہاب روپڑی پر مشتمل گیارہ رکنی رابطہ کمیٹی کا اعلان بھی کیا گیا ،اجلاس میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ او آئی سی اور دیگر عالمی مسلم حلقوں کی ذمہ داری ہے کہ وہ مشرق وسطیٰ کی صورت حال پر حج بیت اللہ سے قبل سربراہی اجلاس طلب کیا جائے

مزید : میٹروپولیٹن 1