بنکاک میں فوجی کمیٹی کا لکھا نیا آئین عوام نے منظور کرلیا

بنکاک میں فوجی کمیٹی کا لکھا نیا آئین عوام نے منظور کرلیا

بنکاک (این این آئی)تھائی لینڈ میں میں فوج کی جانب سے لکھا گیا آئین عوام نے منظور کرلیا، عام انتخابات 2017 میں ہونگے۔ آزاد انتخابی مبصروں نے ووٹ کی نگرانی کی اجازت مانگی تھی لیکن الیکشن کمیشن نے انھیں یہ اجازت نہیں دی غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق بنکاک کے دارالحکومت تھائی لینڈ میں فوج کی نامزد کمیٹی کی جانب سے تیارکئے گئے آئین کو ریفرنڈم میں عوامی حمایت کے بعد منظور کرلیا گیا،تھائی لینڈ میں ووٹروں کی واضح اکثریت نے فوج کی نامزد کمیٹی کے لکھے ہوئے آئین کے مسودے کی حمایت کی ہے، اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق 61.45 ووٹروں نے اس کے حق میں ووٹ دیا ہے۔تھائی لینڈ کے فوجی حکام کا کہنا تھا کہ اگر ریفرینڈم میں نئے آئین کو قبول کر لیا گیا تو یہ مکمل جمہوریت کی جانب اہم قدم ہوگا۔تاہم مخالفین ووٹنگ کو غیر شفاف قرار دے رہے ہیں ان کے بقول اس مجوزہ آئین کے مخالفین کو مہم چلانے کی مکمل آزادی نہیں دی گئی۔نئے مسودے کے حامیوں کا کہنا تھاکہ اس سے ملک میں استحکام آئے گا، جب کہ دوسری جانب ناقدین کہتے ہیں کہ اس سے ملک پر فوج کا غلبہ مزید پکا ہو جائے گا۔نسبتاً کم لوگوں نے رائے شماری میں حصہ لیا، جس کے دوران انھوں نے ایک اور نکتے پر بھی رائے دی جس کے تحت سینیٹ کو نئے وزیرِ اعظم کے انتخاب میں شامل ہونے کا اختیار مل جائے گا۔ریفرینڈم سے قبل ملک میں اس کے خلاف کسی قسم کی مہم چلانے پر پابندی تھی اور درجنوں لوگوں کو حراست میں لیا گیا تھا۔ تھائی لینڈ کی سب سے بڑی سیاسی جماعت نے اس کی مخالفت کی تھی۔امن و امان برقرار رکھنے کے لیے دو لاکھ سے زیادہ افراد تعینات کیے گئے تھے۔البتہ احتجاج کی اطلاعات موصول نہیں ہوئیں۔غیرجانبدار مبصر گروپوں نے ووٹنگ کے عمل کی نگرانی کی درخواست کی تھی لیکن الیکشن کمیشن نے اس کی اجازت نہیں دی۔

مزید : عالمی منظر