بھارت کی آبی جارحیت نالہ ڈیک میں پانی چھوڑ دیا ، کئی دیہات زیرٓب

بھارت کی آبی جارحیت نالہ ڈیک میں پانی چھوڑ دیا ، کئی دیہات زیرٓب

لاہور ( اے این این ) بھارت نے آبی جارحیت کا مظاہرہ کرتے ہوئے نالہ ڈیک میں پانی چھوڑ دیا ٗ دریائے چناب بھی تباہی پھیلانے لگا ، سیالکوٹ اور ظفر وال کے کئی علاقے پانی کی لپیٹ میں آگئے ٗ بلوچستان میں طوفانی بارشوں سے ندی نالے بپھر گئے ٗ ہرنائی میں ہائی الرٹ جاری ٗ لسبیلا اور اوتھل کا وسیع رقبہ سیلاب کی زدمیں آگیا ۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق ایک طرف موسلا دھار بارشیں تو دوسری طرف بھارت کی آبی جارحیت جاری ہے ۔ دریائے چناب میں پانی کی بلند ہوتی سطح نے خطرے کی گھنٹی بجا دی ، سیالکوٹ میں وسیع رقبہ زیر آب آگیا جبکہ بجوات کے پچاسی دیہات کا زمینی رابطہ بھی کٹ گیا ۔نالہ ڈیک میں طغیانی کے باعث ظفر وال کے کئی دیہات پانی کی لپیٹ میں ہیں ۔ سیکڑوں ایکڑ رقبے پر کھڑی فصلیں بھی ڈوبی ہوئی ہیں ۔ موضع منگوال کے مقام پرحفاظتی بند ٹوٹنے سے وسیع رقبہ سیلاب کی زد میں آگیا ۔وزارت پانی و بجلی کے حکام نے خبردار کیا ہے کہ بھارت نے دریائے چناب اور توی میں بڑے ریلوں کی آمد کی اطلاع دے دی ہے ۔ جھنگ سے چار لاکھ کیوسک کا بڑا ریلا منگل کو گزرے گا ۔دوسری طرف بلوچستان میں ندی نالے بپھر گئے، ہرنائی میں ہائی الرٹ جاری کر دیا گیا ، لسبیلا اور اوتھل کا وسیع رقبہ سیلاب کی زد میں آگیا ۔ کوئٹہ ، ہرنائی شاہراہ بھی ٹریفک کے لیے بند کر دی گئی ۔ سندھ کے ندی نالوں میں طغیانی کے باعث سینکڑوں دیہات ڈوب گئے ۔ سانگھڑ کے درجنوں علاقے بھی سیلاب کی زد میں ہیں ۔ تاہم علاقے میں امدادی کارروائیاں شروع نہ ہو سکیں ۔ دوسری جانب ندی نالوں میں طغیانی نے بلوچستان کے مختلف علاقوں میں تباہی مچادی۔ خضدار میں بند ٹوٹنے سے50سے زائد مکان زیر آب آگئے ،ضلع لہڑی میں سیلابی ریلے میں بہہ کر دو بچیاں جاں بحق ہوگئیں ۔خضدار میں درنیلی نال کے قریب بند ٹوٹنے سے کلی حاجی محمد ایوب میں 50 سے زائد گھر زیر آب آگئے تاہم ضلعی انتظامیہ نے کارروائی کرتے ہوئے لوگوں کو بحفاظت نکال لیا۔بلوچستان کے ضلع لہڑی میں سیلابی ریلے میں بہہ کر دو بچیاں ہلاک ہوگئیں جبکہ مقامی ندی کا سیلابی ریلہ داخل ہونے سے آٹھ دیہات زیرآب اوردرجنوں مکانات کو بھی نقصان پہنچا ۔ضلع ہرنائی اور ملحقہ علاقوں میں ہونیوالی بارش کے بعد مختلف ندی نالوں میں سیلابی صورتحال ہے۔ ڈومیراہ کے قریب سیاحوں کی وین سیلابی ریلے میں بہہ گئی لیکن مگر مقامی لوگوں نے اپنی مدد آپ کے تحت بروقت کاروائی کرتے ہوئے وین ریلے سے نکال کر تمام سیاحوں کو محفوظ مقام پر منتقل کر دیا۔سبی کے قریب دریائے ناڑی میں سیلابی صورتحال ہے،41ہزارکیوسک کاسیلابی ریلہ گزررہاہے۔محکمہ آب پاشی سبی ذرائع کے مطابق ہرنائی اور دیگر مختلف علاقوں میں ہوئے بارشوں کے بعد سے دریائے ناڑی میں آج بھی سیلابی صورتحال برقرارہے۔دریا میں سبی کے مقام پر41ہزار کیوسک کاسیلابی ریلہ گزررہاہے ، سیلابی ریلے کے باعث بولان کے کچھ علاقے زیرآب آنے کاخدشہ ہے، سیلابی صورتحال کے باعث مقامی انتظامیہ کو الرٹ کردیاگیا ہے۔

آبی جارحیت

لاہور ، ملتان(اپنے خبر نگار سے ،آئی این پی)بھارتی آبی جارحیت اور بارشوں سے پیدا ہونے والی صورتحال کے سبب حکومت پنجاب نے ملتان سمیت صوبہ کے 11 شہروں میں فلڈ وارننگ جاری کردی۔ضلعی حکومتیں سیلاب سے بچاؤ کے انتظامات کریں،پنجاب حکومت نے ہدایات جاری کردیں۔پاکستان میٹریالوجیکل ڈیپارٹمنٹ نے بھی دریائے چناب میں اونچے درجے کے سیلاب کا خدشہ ظاہرکردیا۔ساڑھے3 لاکھ کیوسک کا سیلابی ریلا 3 روز میں ملتان پہنچے گا۔ پورے ملک میں شدید بارشوں کی وجہ سے سیلاب کا خطرہ بڑھ گیا ہے ،خاص طورپر دریائے چناب میں بھارت ا کی طرف سے لاہور ، ملتان(اپنے خبر نگار سے ،آئی این پی)بھارتی آبی جارحیت اور بارشوں سے پیدا ہونے والی صورتحال کے سبب حکومت پنجاب نے ملتان سمیت صوبہ کے 11 شہروں میں فلڈ وارننگ جاری کردی۔ضلعی حکومتیں سیلاب سے بچاؤ کے انتظامات کریں،پنجاب حکومت نے ہدایات جاری کردیں۔پاکستان میٹریالوجیکل ڈیپارٹمنٹ نے بھی دریائے چناب میں اونچے درجے کے سیلاب کا خدشہ ظاہرکردیا۔ساڑھے3 لاکھ کیوسک کا سیلابی ریلا 3 روز میں ملتان پہنچے گا۔ پورے ملک میں شدید بارشوں کی وجہ سے سیلاب کا خطرہ بڑھ گیا ہے ،خاص طورپر دریائے چناب میں بھارت ا کی طرف سے پانی چھوڑے جانے کی وجہ سے ہیڈ مرالہ کے مقام پراونچے درجے کا سیلاب ہے اورنالہ ڈیک میں بھی پانی کی سطح بڑھنے کی وجہ سے ضلع سیالکوٹ کے سینکڑوں دیہاتوں کے مکینوں کو محفوظ مقامات پر منتقل کر دیا ہے ،سینکڑوں ایکڑ اراضی پر کھڑی فصلیں تباۃ ہو گئی ہیں اوردرجنوں مویشی بھی پانی میں بہہ گئے ہیں اورجانی نقصان کا بھی خطرہ ہے جبکہ ملک کے باقی دریاؤں کی صورت حال ابھی تک خطرے سے باہر ہے ،فلڈ ایمر جنسی سیل محکمہ اریگیشن پنجاب کے مطابق دریاؤں کی صورت حال یہ ہیں،دریائے کابل میں نوشہرہ کے مقام پر 35900کیوسک نارمل دریائے انڈس تربیلا کے مقام پر آمد0 31100اور اخراج 288200 کیوسک ہے ،صورت حال لیول ہے جبکہ خیر آباد کے مقام پر 307600 صورت حال لیول ہے کے بی جی کے مقام پر 240042 کیوسک ہے نارمل صورت حال ہے،چشمہ کا مقام پر 273602کیوسک تونسہ کے مقام پر 207649کیوسک دریائے جہلم میں منگلہ کے مقام پر آمد 57000اور اخراج 10526کیوسک جبکہ صورت حال نارمل ہیدریائے چناب میں مرالہ کے مقام پر 141410کیوسک صورت حال لیول ہے ،خانکی کے مقام پر 193432کیوسک درمیانے درجے کا سیلاب ہے قادر آباد ڈیم پر 366372کیوسک اونچے درجے کا سیلاب ہے، چنیوٹ کے مقام پر 14680کیوسک صورت حال لیول ہے تریموں کے مقام پر 41680کیوسک صورت حال نارمل ہے ،دریائے راوی میں جسسر کے مقام پر 38400کیوسک صورت حال نارمل ہے ،راوی ساہیفن کے مقام پر 41944صورت حال لیول ہے شاہدرہ کے مقام پر 41074کیوسک صورت حال لیول ہے بلو کی کے مقام پر 35540کیوسک صورت حال نارمل ہے سندھنائی کے مقام پر 3928صورت حال نارمل ہے دریائے ستلج میں ہیڈ گنڈا سنگھ کے مقام پر صورت حال نارمل ہے سلیمانکی کے مقام پر 4945کیوسک صورت حال نارمل ہے ،اسلام والا ،صورت حال نل ہے اور باقی مقامات پر بھی صورت حال نل ہے

پانی چھوڑے جانے کی وجہ سے ہیڈ مرالہ کے مقام پراونچے درجے کا سیلاب ہے اورنالہ ڈیک میں بھی پانی کی سطح بڑھنے کی وجہ سے ضلع سیالکوٹ کے سینکڑوں دیہاتوں کے مکینوں کو محفوظ مقامات پر منتقل کر دیا ہے ،سینکڑوں ایکڑ اراضی پر کھڑی فصلیں تباۃ ہو گئی ہیں اوردرجنوں مویشی بھی پانی میں بہہ گئے ہیں اورجانی نقصان کا بھی خطرہ ہے جبکہ ملک کے باقی دریاؤں کی صورت حال ابھی تک خطرے سے باہر ہے ،فلڈ ایمر جنسی سیل محکمہ اریگیشن پنجاب کے مطابق دریاؤں کی صورت حال یہ ہیں،دریائے کابل میں نوشہرہ کے مقام پر 35900کیوسک نارمل دریائے انڈس تربیلا کے مقام پر آمد0 31100اور اخراج 288200 کیوسک ہے ،صورت حال لیول ہے جبکہ خیر آباد کے مقام پر 307600 صورت حال لیول ہے کے بی جی کے مقام پر 240042 کیوسک ہے نارمل صورت حال ہے،چشمہ کا مقام پر 273602کیوسک تونسہ کے مقام پر 207649کیوسک دریائے جہلم میں منگلہ کے مقام پر آمد 57000اور اخراج 10526کیوسک جبکہ صورت حال نارمل ہیدریائے چناب میں مرالہ کے مقام پر 141410کیوسک صورت حال لیول ہے ،خانکی کے مقام پر 193432کیوسک درمیانے درجے کا سیلاب ہے قادر آباد ڈیم پر 366372کیوسک اونچے درجے کا سیلاب ہے، چنیوٹ کے مقام پر 14680کیوسک صورت حال لیول ہے تریموں کے مقام پر 41680کیوسک صورت حال نارمل ہے ،دریائے راوی میں جسسر کے مقام پر 38400کیوسک صورت حال نارمل ہے ،راوی ساہیفن کے مقام پر 41944صورت حال لیول ہے شاہدرہ کے مقام پر 41074کیوسک صورت حال لیول ہے بلو کی کے مقام پر 35540کیوسک صورت حال نارمل ہے سندھنائی کے مقام پر 3928صورت حال نارمل ہے دریائے ستلج میں ہیڈ گنڈا سنگھ کے مقام پر صورت حال نارمل ہے سلیمانکی کے مقام پر 4945کیوسک صورت حال نارمل ہے ،اسلام والا ،صورت حال نل ہے اور باقی مقامات پر بھی صورت حال نل ہے

فلڈ وارننگ

مزید : صفحہ آخر