بھارتی شہر الہ آباد کے ایک سکول نے طلبہ کو قومی ترانہ بندے ماترم گانے سے منع کر دیا

بھارتی شہر الہ آباد کے ایک سکول نے طلبہ کو قومی ترانہ بندے ماترم گانے سے منع ...
 بھارتی شہر الہ آباد کے ایک سکول نے طلبہ کو قومی ترانہ بندے ماترم گانے سے منع کر دیا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارتی شہر الہ آباد کے ایک سکول نے اپنے طلبہ کو بھارتی قومی ترانہ بندے ماترم گانے سے منع کر دیا ہے۔ سکول پرنسپل کے مطابق بندے ماترم کے کچھ اشعار اسلام مخالف ہیں۔بھارتی میڈیا کے مطابق الہ آباد کے ایک سکول میں گزشتہ بارہ سال سے قومی ترانہ بندے ماترم گانے پر پابندی عائد ہے۔ سکول کے پرنسپل ضیاء الحق کے مطابق ترانے کا بھارتی بھگیاں ویدھیا والا حصہ اسلام کیخلاف ہے۔ اس لئے سکول کے طلبہ کو بندے ماترم گانے سے منع کیا گیا تھا۔ بھارتی میڈیا کے مطابق سکول بارے رپورٹس شائع ہونے کے بعد انتظامیہ حرکت میں آئی اور سکول پرنسپل کو گرفتار کیا گیا ہے۔ انتظامیہ کے مطابق یہ سکول حکومت کے ساتھ رجسٹرڈ نہیں ہے۔ قومی ترانہ کے تنازع کے بعد انتظامیہ نے سکول پر تالا لگا دیا ہے۔ انتظامیہ کا کہنا ہے کہ سکول اجازت کے بغیر ہی چل رہا تھا۔ اس لئے اس کے خلاف کارروائی کی گئی ہے۔خیال رہے کہ الہ آباد میں ایم اے کنوینٹ سکول کے آٹھ ٹیچروں نے اس لئے استعفیٰ دیدیا تھا کہ انتظامیہ سکول میں قومی ترانہ گانے کی اجازت نہیں دے رہا ہے۔ استعفی دینے والے ٹیچروں کا کہنا ہے کہ قومی گیت انہیں آئین سے دیا گیا بنیادی حق ہے لیکن سکول انتظامیہ نے جب انہیں اس گانے پر اعتراض ظاہر کیا تو انہوں نے اسکول چھوڑ دیا ہے۔ ٹیچروں کا کہنا ہے کہ 15 اگست پر سکول میں ایک پروگرام ہونا تھا۔ ہم لوگوں نے کہا کہ قومی ترانہ ہونا ہے جس پر انتظامیہ نے کہا کہ قومی ترانہ آج تک ہمارے یہاں نہیں ہوا اور اس مرتبہ بھی نہیں ہو گا۔

قومی ترانہ

مزید : صفحہ آخر