خیبر پختونخوا اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے محکمہ اوقاف و مذہبی امور کااجلاس

خیبر پختونخوا اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے محکمہ اوقاف و مذہبی امور کااجلاس

پشاور( پاکستان نیوز)خیبر پختونخوا اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے محکمہ اوقاف و مذہبی امور کا ایک اجلاس کمیٹی کے چےئرمین و ایم پی اے نور سلیم ملک کی زیر صدارت پیر کے روز صوبائی اسمبلی سیکرٹیریٹ پشاور کے کانفرنس روم میں منعقد ہوا ۔اجلاس میں صوبائی وزیر اوقاف و مذہبی امورحاجی حبیب الرحمن ،ممبران صوبائی اسمبلی مولانا مفتی فضل غفور،اعزاز الملک افکا ری ، فضل حکیم، فریڈ رک عظیم، عسکر پرویز سمیت سیکرٹری محکمہ اوقاف ،کمشنر وڈپٹی کمشنرمردان اور ڈی پی او مردان کے علاوہ محکمہ قانون اوردیگرمتعلقہ حکام نے شرکت کی۔اجلاس میں محکمہ اوقاف سے متعلق مختلف امور پر تفصیلی بحث کی گئی اوراس سلسلے میں بعض اہم فیصلے بھی کئے گئے۔سیکرٹری محکمہ اوقاف نے اجلاس کو آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ صوبے کے مختلف اضلاع میں محکمہ اوقاف کی زمینوں کو غیر قانونی قابضین سے واگزار کرانے کیلئے تمام متعلقہ ضلعی انتظامیہ اورپولیس حکام کو باقاعدہ طور پر آگاہ کیا گیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ محکمہ اوقاف اپنی اراضیات کا قبضہ ضلعی انتظامیہ اور پولیس کی مدد کے بغیرحاصل نہیں کر سکتا۔کمیٹی نے اس ضمن میں فیصلہ کیا کہ محکمہ اوقاف ،ضلعی انتظامیہ، ڈسٹرکٹ گورنمنٹ اورمحکمہ پولیس کے نمائندوں پر مشتمل ایک اعلیٰ سطح کمیٹی تشکیل دی اور ہدایت کی کہ کمیٹی دوہفتے کے اندر محکمہ اوقاف کے زمینیں غیر قانونی قابضین سے واگزار کرانے کیلئے موثر اورحتمی حکمت عملی مرتب کرکے کمیٹی کورپورٹ پیش کرے۔ بعض سرکاری محکموں کی غیرقانونی طریقے سے محکمہ اوقاف کی اراضیات کے استعمال کے ضمن میں کمیٹی نے فیصلہ کیا کہ آئندہ اجلاس میں سیکرٹری بلدیات، سیکرٹری محکمہ ابتدائی وثانوی تعلیم،سیکرٹری محکمہ صحت کوطلب کیا جائے گا تاکہ وہ کمیٹی کو اس سلسلے میں اپنے محکموں کی پوزیشن واضح کر سکیں۔ اس موقع پرحکام نے اجلاس کے شرکاء کو محکمہ اوقاف کی جانب سے صوبے میں جاری ترقیاتی منصوبوں پر بھی تفصیلی بریفنگ دی اور مطالبہ کیا کہ پشاورمیں قائم قرآن محل کیلئے فنڈز اور سہولیات فراہم کی جائیں تاکہ اس کے قیام کا مقصد پوراکیا جا سکے۔کمیٹی نے مولانا مفتی فضل غفور کی جانب سے پیش کی جانے والی درخواست جس میں محکمہ اوقاف سے خیر آباد ضلع نوشہرہ میں قائم قرآن پیپر ملز اینڈ پرنٹنگ کمپلکس جس کے بارے میں عوامی شکایات موصول ہوئی تھیں کہ مذکورہ ادارہ قرآن پاک کے ضعیف نسخوں اور پرانے صفحات کو ری پراسس کرکے گتہ اور کاغذبناتے ہیں جس کی کمیٹی سے مکمل تحقیات کی استدعا کی گئی تھی اس سلسلے میں کمیٹی نے فیصلہ کیا کہ محکمہ اوقاف فوری طور پر ضلعی انتظامیہ اورپولیس کے ساتھ معاملے کی مکمل تحقیقات کرے اور کمیٹی کو رپورٹ پیش کرے کیونکہ یہ انتہائی نازک مسئلہ ہے جس سے عوامی اور مذہبی حلقوں میں انتہائی تشویش پائی جاتی ہے۔کمیٹی نے فیصلہ کیا کہ یہ قبیح گناہ کرنے والے عناصر کو ہرحال میں بے نقاب کرکے عبرت ناک سزا دی جائے ۔

 

مزید : کراچی صفحہ اول