زیادہ دیر بیٹھے رہنے والے افراد اپنے پاؤں ہلاکر امراضِ قلب سے محفوظ رہ سکتے ہیں

زیادہ دیر بیٹھے رہنے والے افراد اپنے پاؤں ہلاکر امراضِ قلب سے محفوظ رہ سکتے ...

کولمبیا(مانیٹرنگ ڈیسک) ایک نئے مطالعے سے انکشاف ہوا ہے کہ بیٹھنے کی ملازمت کرنے والے یا گھروں میں بیٹھے رہنے والے خواتین و حضرات اپنے پیروں اور انگوٹھوں کو حرکت دے کر امراضِ قلب سے بچ سکتے ہیں جو بیٹھے رہنے کی وجہ سے ممکنہ طور پر انہیں لاحق ہوسکتے ہیں۔یونیورسٹی آف میسوری کے ماہرین کہتے ہیں کہ عمررسیدہ افراد جو دفتروں میں دیر تک بیٹھے رہتے ہیں وہ بیٹھے بیٹھے اپنے پاؤں اور انگوٹھے ہلاکر بدن میں دورانِ خون بڑھا کر جان لیوا دل کے امراض سے محفوظ رہ سکتے ہیں۔ خواہ کوئی تقریب ہو، گھر میں ٹی وی دیکھتے ہوئے اور دفاتر میں ہم کئی گھنٹے بیٹھے رہنے والے عمر رسیدہ افراد بہت دیر بیٹھے رہیں تو اس سے دل کا دورانِ خون متاثر ہوتا ہے جو دل کی بیماریوں کی وجہ بھی بن سکتا ہے۔ اس سے قبل کئی اہم تحقیقات سے ثابت ہوچکا ہے کہ بہت دیر تک بیٹھے رہنے سے عمررسیدہ افراد قبل ازوقت موت کے شکار بھی ہوسکتے ہیں۔میسوری یونیورسٹی میں ڈاکٹر حومے پاڈیلا کے مطابق جدید طرزِ زندگی میں ہم غیرشعوری طور پر بہت دیر تک بیٹھے رہتے ہیں۔ اگر ہم بہت دیر تک بیٹھے رہیں تو پیروں میں خون کی گردش سست ہوجاتی ہے جو قلب کو متاثر کرتا ہے۔ ایسے میں بیٹھے بیٹھے پیر اور انگوٹھے ہلائے جائیں تو پیروں تک خون کا بہاؤ بہتر ہوجاتا ہے اور شریانیں بہتر ہوتی ہیں۔ اس معمولی سی ورزش کے حیرت انگیز اثرات مرتب ہوتے ہیں جو اب تک سائنس کے نگاہوں سے اوجھل تھے۔

امراضِ قلب

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر