ملتان سمیت جنوبی پنجاب میں موسلا دھار بارش ،نشیبی علاقے زیر آب ،میپکو ،مواصلاتی نظام درہم برہم ،پروزیں منسوخ

ملتان سمیت جنوبی پنجاب میں موسلا دھار بارش ،نشیبی علاقے زیر آب ،میپکو ...

ملتان، منڈی یزمان، لیاقت پور (خبر نگار + جنرل رپورٹر+ سٹاف رپورٹر+ سٹی روپرٹر+ خبر نگار خصوصی + وقائع نگار+ نمائندگان) (بقیہ نمبر39صفحہ7پر )

ملتان سمیت جنوبی پنجاب کے کئی شہروں میں موسلا دھار بارش ہر طرف جل تھل نشیبی علاقے زیر آب کئی کئی فٹ پانی جمع ہوگیا بارش کے باعث میپکو کا سسٹم جواب دے گیا ،10 سے زائد گرڈ ٹرپ کر گئے کئی علاقوں میں طویل بریک ڈاؤن شدید بارش کے نتیجے میں پرواز میں منسوخ ‘ متعدد تاخیر کا شکار ‘ ریلوے کا جدید ترین سگنل سسٹم خراب‘ بارش نے واسا کی تیاریوں کا پول کھول دیا سڑکیں نالوں میں تبدیل ‘ شہری گھروں میں محصور ہو کر تفصیل کیمطابق ملتان اور گردونواح میں سوموار کے روز ساون کی موسلا دھار بارش کے باعث ہر طرف جل تھل ہو کر رہ گیا مقامی محکمہ موسمیات کی طرف سے 34 ملی میٹر جبکہ نیو ملتان کے علاقے میں پرائیویٹ آبزرویٹری پر 58 ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی ملتان اور نواحی علاقے پچھلے کئی روز سے سامان کی گھنگھور گھٹاؤں کی لپیٹ میں تھے اتوار کے روز بھی سیاہ بادل چھائے رہے اور کہیں کہیں ہلکی بارش ہوگئی مگر سوموار کے روز دوپہر 1بجے کے قریب ملتان شہر میں ہونے والی موسلا دھار بارش کے باعث ہر طرف جل تھل ہو کر رہ گیا اور مسلسل 1گھنٹہ 20 منٹ تک بارش کی وجہ سے گرمی کا زور ٹوٹ گیا اور موسم خوشگوار ہوگیا تاہم بارش کے بعد دھوپ نکلنے سے حبس کی شدت بڑھ گئی جبکہ نیو ملتان میں ترقی پسند کاشتکار جہانزیب کی طرف سے نیو ملتان ’’کے‘‘ بلاک میں لگائی جانے والی آبزرویٹری میں 58 ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی جبکہ مزید بارشوں کا سلسلہ بدھ، جمعرات کو مزید تیز بارش کی پیشگوئی کی ہے۔ دریں اثناء ملتان میں گذشتہ روز ایک گھنٹہ تک جاری رہنے والی بارش نے واسا کی تمام تیاریوں کا پول کھول دیا ہر ہفتہ میں واسا کے مسئلہ پر میٹنگ اور اجلاس کا کھیل کھیلنے والے ضلعی انتظامیہ واسا کے افسران کی نااہلی بارش میں کھل کر سامنے آئی ہے ایک گھنٹہ کی جاری رہنے والی بارش کیوجہ سے سڑکیں ندی نالوں میں تبدیل ہوگئیں گلیوں میں 3سے 4فٹ تک پانی جمع ہونے کیوجہ سے گھروں میں محصور ہونے والے شہری بھی متاثر ہوئے بغیر نہ رہ سکے بتایا جاتا ہے کہ بارش کیوجہ سے ایل ایم کیو روڈ ، ایم ڈی چوک کلمہ چوک، چونگی نمبر 9 ، نواب پور روڈ ، ایس پی چوک، کٹونمنٹ ،سورج میانی ، طارق روڈ،نواں شہر چوک، چونگی نمبر 6 پر کئی کئی فٹ پانی جمع ہوگیا سیوریج لائنیں بارش کے پانی کا بہاؤ برداشت نہیں کرسکیں سیوریج پانی بارش کے پانی میں شامل ہونے کیوجہ سے سڑکیں جل تھل ہوگئیں اس صورتحال میں واسا حکام نے ڈسپوزل اسٹیشن بھی بند کردیئے جس کی وجہ سے پانی کی صورتحال بدترین شکل اختیار کر گئی بارش کیوجہ سے پیر خورشید کالونی ، الطاف ٹاؤن، سمن آباد، زکریا ٹاؤن،شاہین آباد، نواں شہر اندرون،رائیٹرز کالونی ، شریف پورہ ، اندرون شہر کی صورتحال بھی انتہائی ابتر ہوگئی مکانوں کی چھتیں بھی ٹپک پڑیں شاہین مارکیٹ میں 2سے 4 فٹ تک پانی جمع ہونے کی وجہ سے شہری گھروں میں محصور رہے واٹر ورکس روڈ ، خانیوال روڈ، خیام سنیما، کے اردگرد آبادیاں بارش کے پانی میں گھر کر رہ گئیں نیو ملتان میں ایس بلاک کسی تالاب کا منظر پیش کر رہا ہے چونگی نمبر 9 پر بارش اور سیوریج کی کے پانی کیوجہ سے ٹریفک بدترین جام ہوگئی پانی کی نکاسی نہ ہونے کی وجہ سے سڑکیں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہونے کا خدشہ ہے رشید آباد چوک سے شہری اپنی مدد آپ کے تحت رات گئے پانی نکالتے رہے حسین آگاہی میں بارش کا پانی جمع ہونے کیوجہ سے سے ٹریفک کو متبادل راستوں سے گزرنا پڑا اس صورتحال کے بارے میں گذشتہ کئی ہفتوں سے واسا افسران اعلیٰ افسران کو مطمئن کرنے کی کوشش میں لگے ہوئے تھے ۔اسی حوالے سے متعدد اجلاس بھی ہوئے لیکن ایک گھنٹہ کی بارش نے واسا کے تمام انتظامات اور تیاریوں کا پول کھول دیا ہے ۔ علاوہ ازیں ملتان میں ہونے والی بارش کی وجہ وحدت کالونی میں مقیم سرکاری افسران اور اہلکار بھی شدید متاثر ہوئے پوری کالونی میں کئی کئی فٹ پانی کھڑا ہے کالونی کے مقیم گھروں میں محصور ہو رہ چکے ہیں لوڈ شیڈنگ اور حبس کی وجہ سے وحدت کالونی میں مقیم سرکاری افسران اور اہلکاروں کا جینا دوبھر ہوگیا سرونٹ کوارٹر کی چھتیں بارش کے پانی کا دباؤ برداشت نہ کرسکیں اور ٹپک پڑیں واسا کے اہلکار شہر بھر میں سرگرم رہے لیکن وحدت کالونی پر توجہ ضروری ہے جبکہ ڈی سی او آفس میں واقع مختلف گھروں کی چھتیں ٹپک پڑیں رجسٹری برانچ ملتان سٹی کی چھت ٹپکنے سے بارش کا پانی ریکارڈ روم میں جمع ہوگیا جس کیوجہ سے کروڑوں روپے مالیت کا سامان ریکارڈ بوسیدہ ہوگیا اور پرانا ریکارڈ جو کہ پہلے ہی بوسیدہ تھا پانی میں بھیگنے کی وجہ سے ختم ہوگیا۔ گذشتہ روز ایک گھنٹہ سے زائد وقت تک ہونے والی بارش کے پانی نے میٹرو روٹس کو بھی شدید متاثر کیا ۔ مچھلی مارکیٹ، وہاڑی چوک تک پانی جمع ہونے کیوجہ سے میٹرو بس پراجیکٹ پر کام بند کردیا گیا چونگی نمبر 9 سے وہاڑی چوک تک جگہ جگہ پانی ندی نالوں کی صورت میں جمع چکا ہے جس سے اربوں روپے مالیت کے پراجیکٹ پر کام کرنے والے ماہرین کی اہلیت کا پول کھل گیا ہے۔ ملتان شہرمیں موسلادھاربارش کے بعدمقامی عدالتوں کی پرانی عمارتوں کی چھتوں پرپرنالے بندہوجانے کی وجہ سیپانی کھڑارہا اور کچہری کے تمام داخلی اور خارجی راستوں کے علاوہ وکلا کے چیمبرزکی گلیوں اورعدالتوں تک پہنچنے کیراستوں پر بھی ڈھیروں پانی کھڑاہوگیاجس سیوکلاء و دیگرافراد کاگزرنامحال ہوگیااوربارش کے فوراًبعدکچہری ویران ہوگئی مزید براں ہائیکورٹ سے ملحقہ سڑک کو ون وے اورنذیراحمد چوک پر ٹریفک کے دباؤسے بارش کیدوران شام تک ٹریفک کاجام ہونا معمول بنا رہا۔موسلا دھار بارش کے باعث ہسپتالوں کے وارڈز ‘ بیسمنٹ اور پارکنگ سٹینڈز میں پانی جمع ہوگیا ۔ پیر کے روز موسلادھار بارش سے نشتر ہسپتال کے بیسمنٹ میں واقع کینسر وارڈز ‘ امراض نفسیاتی وارڈ ‘ مین فارمیسی جبکہ پارکنگ سٹینڈز میں پانی کھڑا ہوگیا ہے ۔ کارڈیالوجی انسٹیٹیوٹ ‘ چلڈرن کمپلیکس ‘ سول ہسپتال کے پارکنگ سٹینڈز میں بھی پانی جمع ہو گیا جس سے مریضوں و لواحقین کو مشکلات پیش آئی ۔ گذشتہ روز ملتان میں کئی گھنٹے ہونے والی موسلا دھار بارشوں کے باعث شہر کے قبرستانوں میں پانی جمع ہو گیا ہے جن جلال باقری قبرستان ، حسن پروانہ قبرستان ، ولایت آباد قبر ستان ، بستی خداد قبرستان ،نشتر قبرستان سمیت شہر میں موجود متعدد قبرستانوں میں پانی جمع ہو گیا ہے جس کی وجہ سے کئی قبریں بیٹھ گئی ہیں ۔ ملتان میں شدید بارش سے میپکو کا ترسیلی نظام بری طرح متاثر ہوا ‘کئی علاقوں میں طویل بریک ڈاؤن ہوا ‘ متعدد علاقوں کی بجلی رات گئے تک بحال نہیں ہو سکی ‘ چوک فوارہ کے قریبی علاقے کی بجلی بند ہوئی جوبحال نہ ہو سکی ‘اس دوران بارش کے باعث درجنوں ٹرانسفارمر خراب ہو گئے جبکہ سیکڑوں میٹر جل گئے جس کے باعث صارفین کو شدید مشکل کا سامنا کرنا پڑا۔ گزشتہ روز دوپہر بارہ بجے سے شروع ہونے والی بارش دو گھنٹے جاری رہی جس سے میپکو کے 10سے زائد گرڈ ٹرپ کرگئے ،ترجمان کے مطابق تین مقامات پر درخت 11کے وی تاروں پرگرگئے جن کی مرمت میں ٹائم صرف ہوا تاہم بیشتر فیڈر شام چار بجے تک چالو کردئے گئے‘نواحی علاقوں میں مختلف فیڈرز سے بجلی بند ہوئی جو آخری اطلاع تک بحال نہیں ہوئی تھی۔ موسلا دھار بار ش نے خستہ حال ریلوے کوارٹروں میں رہائش پذیر ملازمین کے لئے مشکلات پیدا کردیں‘ سطح زمین سے5‘5فٹ گہرے کوارٹر بارش کے بعد تالاب کا منظر پیش کررہے تھے متعددکوارٹروں کی چھتیں ٹپکنے لگیں جس کے باعث ملازمین کا قیمتی گھریلو سامان بھی خراب ہوگیا ریلوے ملازمین نے مطالبہ کیا ہے کہ انتظامیہ فوری طور پر کوارٹروں کی مرمت کروائے۔ بارش کے باعث پروازیں منسوخ‘ متعدد تاخیر سے پہنچیں دبئی سے آنے والی فلائی دبئی کی پرواز آدھا گھنٹہ‘ کراچی سے ملتان آنے والی پی آئی اے کی دو پروازیں بھی ایک ایک گھنٹہ کی تاخیر سے ملتان اےئر پورٹ پہنچیں ۔ شدید بارشوں کے باعث ڈیرہ غازی خان میں ریلوے کا جدید سگنل سسٹم خراب‘ لائن بلاک ہونے سے خوشحال ایکسپریس کو تاخیر سے بھیجا گیا ڈی سی او ریلوے طاہر مسعود مروت شکایت پر فوراً ڈیرہ غازی خان پہنچ گئے‘ساری رات خود نگرانی کرکے لائن چالو کروا کر صبح7بجے ملتان واپس آئے۔ گز شتہ شب یزمان کے مضا فا تی چکو ک 51،48،47،46ڈی بی ،کڈوالہ بنگلہ ،لا ٹا ں سنگار ،اور چو لستا نی چکو ک 73ڈی بی ،72 اور 77ڈی بی میں مو سلا دھار با رش ہو ئی ۔با رش سے کھیتو ں میں پا نی کھڑا ہو گیا ۔کا شتکار ٹریکٹرو ں اورواٹر پنکھو ں کی مدد سے کپا س کے کھیتو ں سے پا نی نکا لتے رہے۔ لیاقت پور سے نمائندہ پاکستان کے مطابق لیاقت پورمیں دوروزقبل ہونے والی بارش کاپانی ابھی چوراہوں اورنشیبی علاقوں پرکھڑاہواتھاکہ ایک رات قبل ایک گھنٹہ ہونے والی مسلسل بارش سے شہرکے تمام سڑکوں،چوراہوں پر2,2فٹ پانی کھڑاہوگیاہے۔گٹرابلنے سے صورت حال مزیذابترہوگئی ہے۔سیوریج کاگندہ پانی شامل ہوگیاہے۔جوکہ شہریوں،دکانداروں اوراہگیروں کیلئے پریشانی کاباعث بن رہاہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر