تحصیل جتوئی ‘ علی پور سے ماہانہ 2 ہزار سے زائد موٹر سائیکل چوری ‘ ڈکیتی ہونیکا انکشاف

تحصیل جتوئی ‘ علی پور سے ماہانہ 2 ہزار سے زائد موٹر سائیکل چوری ‘ ڈکیتی ...

جتوئی (نامہ نگار) تحصیل جتوئی اور علی پور سے ہر ماہ دو ہزار سے زائد موٹر سائیکلوں کی چوری اور ڈکیتی کی واردات کر کے دوسرے(بقیہ نمبر41صفحہ12پر )

شہر میں سمگلنگ کی جار ہی ہے ۔ جن کی مالیت 30کروڑ سے زائد بنتی ہے ۔ موٹر سائیکل چوری کی وارداتیں اکثر ہسپتالوں بنکوں شاپنگ مالوں بازاروں اور سکول و کالجز میں ہو رہی ہیں چوری اور ڈکیتی شدہ موٹر سائیکلوں میں سے 20فیصد مظفر گڑھ کے دریائی پتن کے راستے پتن کندائی پتن گبر آرائیں پتن سرکی پتن میرانی پتن موچی والا پتن راجن پور فاضل پور جام پور داخل فورٹ منرو بلوچستان و دیگر علاقوں میں سمگلنگ کئے جاتے ہیں جبکہ 10فیصد موٹر سائیکل علاقہ کے بااثر سیہ گیرو ں اور چٹی دلالوں کے زرائع بھونگہ لے کر واپس برآمد کرتی ہے زرائع سے معلوم ہوا ہے کہ موٹر سائیکل چوری اور ڈکیتی میں اکثر پولیس کے افسران اور اہلکار ملوث ہوتے ہیں تھانہ جتوئی شہر سلطان ، بیٹ میر ہزار ، چوکی بیٹ دریائی ، چوکی رام پور ،چوکی لنڈی پتافی ہر ماہ لاکھوں روپے کے کما رہے ہیں چوکی انچارج موٹر سائیکل 10 ہزار سے 20ہزار وصول کر کے موٹر سائیکل گزار دیتے ہیں اور ہر ماہ اپنے افسران کو باقاعدگی سے ان کا حصہ بھیج دیتے ہیں زرائع سے یہ معلوم ہوا ہے کہ ان پولیس چوکیوں پر تعینات کرنے کیلئے بولیاں لگائی جاتی ہیں اس کے علاوہ دونوں اضلاع میں بااثر وڈیرے بھی چوری ڈکیتی ارو سمگلنگ کرنے والے گروہوں کی سر پرستی کرتے ہیں جن کے آگے قانون پر عملہ آمد کرانے والے ادارے بے بس نظر آتے ہیں گزشتہ چند قبل تھانہ جتوئی کی حدو د میں جتوئی کے احساس ادارے اسپیشل برانچ کے اہلکار کا موٹر سائیکل چوری کر لیا گیا اور سی ٹی ڈی ادارے کے اہلکار کا بھی موٹرسائیکل چوری کر لیا گیا ۔ مگر ابھی تک کوئی نشان نہیں ملا۔

مزید : ملتان صفحہ آخر