مہنگائی اور ریلوے انتظامیہ کی عدم دلچسپی سے سکاؤٹس کلب غیر فعال

مہنگائی اور ریلوے انتظامیہ کی عدم دلچسپی سے سکاؤٹس کلب غیر فعال

ملتان(جنرل رپورٹر)حکومتی سرپرستی نہ ہونے ‘مہنگائی اور ریلوے انتظامیہ کی عدم دلچسپی کے باعث سکاؤٹس کلب غیر فعال ہو کر رہ گیا‘اپنی مدد آپ کے تحت خدمت کا جذبہ رکھنے والے ملازمین نے آہستہ آہستہ کنارہ کشی اختیار کرلی تفصیل کے مطابق ریلوے سکاؤٹس کلب کے ممبران کی(بقیہ نمبر29صفحہ12پر )

تعداد70کے قریب ہے تاہم زیادہ تر صرف نام کی حد تک ممبر ہیں صرف10سے15ملازمین سکاؤٹس کلب میں فرائض سرانجام دیتے ہیں معلوم ہوا ہے کہ ملازمین کی علیحدگی کی اصل وجہ حکومتی عدم سرپرستی اور پینٹ شرٹ والے یونیفارم کی پابندی ہے سکاؤٹس کا اس بارے کہنا تھا کہ ہم اپنی ڈیوٹی کے علاوہ صرف خدمت کے جذبہ سے سرشار ہو کر کام کرتے ہیں سیلاب کے دن ہوں یا قدرتی آفات‘ریلوے سکاؤٹس ہر جگہ آگے ہوتے ہیں پچھلے سال تک ریلوے سکاؤٹس حاجی کیمپوں میں بھی اپنی خدمات فراہم کرتے تھے مگر اب مہنگائی کے باعث بچوں کے اخراجات پورے نہیں ہوتے سکاؤٹس یونیفارم‘ جوتے کہاں سے خریدیں۔ریلوے سکاؤٹس نے وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق سے سے مطالبہ کیا ہے کہ سکاؤٹس کلب کو فعال کرکے یونیفارم کی پابندی ختم کی جائے اور ملازمین میں رضا کارانہ فرائض ادا کرنے کی دلچسپی پیدا کرنے کے لئے سپیشل کورسز کروائے جائیں ۔

ریلوے سکاؤٹس

 

مزید : ملتان صفحہ آخر