بلوچستان سے مزید دو ’را ‘افسران کی گرفتاری کا انکشاف

بلوچستان سے مزید دو ’را ‘افسران کی گرفتاری کا انکشاف
بلوچستان سے مزید دو ’را ‘افسران کی گرفتاری کا انکشاف

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد (ویب ڈیسک) کل بھوشن یادیو کے بعد بھارتی خفیہ ایجنسی را کے مزید 2 حاضر سروس افسران کی بلوچستان سے گرفتاری کا انکشاف ہواہے ، یبھارتی خفیہ ایجنسی کی جانب سے بلوچستان میں جشن آزادی کی تقریبات سبوتاژ کرنے کیلئے ایجنٹوں کو ہدایات جاری کئے جانے اور دہشت گردی کا ٹاسک افغانستان میں روپوش کالعدم ٹی ٹی پی، بی آر اے ، بی ایل اے و داعش کع دیئے جانے کی اطلاعات کے بعد خفیہ اداروں نے بلوچستان حکومت کو سیکیورٹی سخت کرنے کی سفارش کر دی ہے۔ خفیہ اداروں کو پی پی دور میں اہم حکومتی شخصیت کے بھی کئی غیر ملکی خفیہ ایجنسیوں سے روابط کے شاہد مل گئے ہیں ، یہ انکشافات کراچی کے روزنامہ امت نے کیے ہیں۔ 

تفصیلات کے مطابق کل بھوشن یادیو کے بعد بھارتی خفیہ ایجنسی را کے مزد 2 حاضر سروس افسران بلوچستان سے گرفتار کئے جا چکے ہیں ۔ را کا ایک افسر تاجربن کر کارروائیاں جاری رکھے ہوئے تھا ، جبکہ دوسرا  مقامی شخص کی ملی بھگت سے پاکستانی شناختی کارڈ بنوانے کے بعد سرکاری ملازمت حاصل کرنے میں کامیاب ہو گیا تھا۔ دونوں سے حاصل معلومات کے نتیجے میں مزید گرفتاریاں بھی متوقع ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ گرفتار بھارتی ایجنٹوں سے تفتیش کی مزید معلومات ظاہر نہیں کی جاسکتیں۔

ذرائع نے مزید بتایا کہ  اہم شخصیت کے قریبی رشتے داروں کی معاونت سے بگٹی فراریوں نے قائداعظم ریزیڈ نسی زیارت تباہ کی۔ ذرائع کے مطابق دشمن ہر صورت سی پیک منصوبے میں رکاوٹیں ڈالنا چاہتا ہے جس کی بنیادی وجہ گوادر کا محل و قوع ہے۔ بلوچستان کی 760 کلو میٹر طویل ساحلی پیٹی پاکستان کو مشرق وسطیٰ سے ملاتی ہے۔ مشرق وسطیٰ سے نکلنے والے آئل ٹینکرز آبنائے ہر مز، خلیج عمان اور گوادر سے ہو کر چین و جاپان کا رخ کرتے ہیں تو دوسری طرف آئل ٹینکرز جہاز گوادر ہی کے راستے بحیرہ عرب و نہر سوئز سے ہو کر ہی یورپ کا رخ کرتے ہیں۔ اہم ترین بندرگاہ گوادر کے آپریشنل ہونے سے پاکستان تمام بحری نقل و حرکت پر نظر رکھنے کے قابل بھی ہو جائے گا۔ گوادر قدرتی طور پر ایسی بندرگاہ ہے، جہاں آسانی سے بڑے بحری جہاز بھی لنگر انداز ہو سکتے ہیں، اسی لئے بھارت، افغانستان ، ایران ، برطانیہ و امریکہ نہیں چاہتے کہ گوادر بندرگاہ آپریشنل ہو ، تاہم بلوچستان بھر میں حساس اداروں کی مدد سے فورسز نے دہشت گردوں کی کمر توڑ دی ہے اور انہیں اسلحہ سپلائی کی راہیں مسدود کئے جانے کے علاوہ ان کی پہاڑی پناہ گاہوں کو بھی تباہ کر دیا گیا ہے۔ بھارت نے خوست جیسے چھوٹے شہر میں بھارتی قونصل خانہ صرف پاکستان میں دہشت گردانہ کارروائیوں کیلئے کھولا اور اسے افغانستان ، امریکہ ونیٹو کی مکمل سپورٹ بھی حاصل ہے ۔

مزید : اسلام آباد