وکلا اورججوں کو گمنام دشمن کے خلاف کھڑے ہونا ہے،چیف جسٹس،عدالتوں کا نیاسیکیورٹی پلان منظور

وکلا اورججوں کو گمنام دشمن کے خلاف کھڑے ہونا ہے،چیف جسٹس،عدالتوں کا ...
وکلا اورججوں کو گمنام دشمن کے خلاف کھڑے ہونا ہے،چیف جسٹس،عدالتوں کا نیاسیکیورٹی پلان منظور

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور(نامہ نگار خصوصی)چیف جسٹس لاہورہائیکورٹ مسٹرجسٹس سیدمنصور علی شاہ نے سانحہ کوئٹہ کے تناظر میں صوبہ بھر کی عدالتوں کے نئے سیکیورٹی پلان کی منظوری دیتے ہوئے کہا ہے کہ بلیم گیم سے نکل جائیں،نظام عدل سنگین حملہ کی زد میں ہے وکلا اورججوں کو مشکل وقت میں گمنام دشمن کے خلاف کھڑے ہونا ہے۔چیف جسٹس مسٹر جسٹس سید منصور علی شاہ کی سربراہی میں لاہورہائیکورٹ سمیت پنجاب کی ماتحت عدالتوں میں سکیورٹی انتظامات کاجائزہ لینے کے لئے ہونے والے اجلاس میں آئی جی پنجاب،ایڈووکیٹ جنرل پنجاب اورہوم سیکرٹری کے علاوہ اعلی پولیس افسرا ن نے شرکت کی،اجلاس سے خطاب میں چیف جسٹس نے کہاکہ نظام عدل سنگین حملہ کی زد میں ہے،چیف جسٹس نے مزید کہاکہ وکلا اورججوں کو مشکل وقت میں گمنام دشمن کے خلاف کھڑے ہونا ہے،بلیم گیم سے نکل جائیں ہمیں مثبت انداز میں آگے بڑھنا ہے،ہم حالت جنگ میں ہیں ہمارے پاس جو سہولیات ہیں انہی کے ساتھ آگے چلنا ہے،پنجاب کی تمام عدلیہ کے لئے ایک جیسا سیکیورٹی پلان مرتب کرنا ہے،نظام عدل کو مثبت انداز میں چلاکر دہشت گردوں کو ان کے عزائم کی ناکامی کاثبوت دینا ہے،چیف جسٹس نے ہائیکورٹ سمیت پنجاب کی تمام عدالتوں سائلین کو اصل شناختی کے بغیر داخلے پرپابندی لگادی،ہائیکورٹ اور پنجاب کی عدالتوں میں وکلا  کی چیکنگ لازمی قرار دے دی گئی جبکہ رجسٹر ارلاہورہائیکورٹ کی سربراہی میں سکیورٹی انتظامات سے متعلق ایک کمیٹی بھی تشکیل دی گئی ہے،ہرضلع میں بھی ایک سیکیورٹی کمیٹی کام کرے گی جس کے سربراہ ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن ججز ہوں گے،سکیورٹی کمیٹی ہر 15دن بعد سکیورٹی انتظامات سے متعلق رپورٹ پیش کرے گی،چیف جسٹس لاہورہائیکورٹ منصورعلی شاہ نے پنجاب بارکونسل اور بارایسوسی ایشنزکی سکیورٹی سخت کرنے کاحکم بھی جاری کیا ہے۔

مزید : لاہور