جنوبی کورین سرمایہ کاروں کی کوڑے سے توانائی پیداکرنے کیلئے پلانٹ لگانے میں دلچسپی

جنوبی کورین سرمایہ کاروں کی کوڑے سے توانائی پیداکرنے کیلئے پلانٹ لگانے میں ...

لاہور(کامرس رپورٹر جنوبی کوریا کے سرمایہ کاروں نے پنجاب میں گندگی اور کوڑے سے توانائی پیدا کرنے کیلئے خصوصی پلانٹ لگانے میں دلچسپی کا اظہار کیا ہے۔ اس حوالے سے پنجاب بورڈ برائے سرمایہ کاری و تجارت میں ہونے والی ایک اہم ملاقات کے دوران جنوبی کوریا سے تعلق رکھنے والے سرمایہ کاروں کا کہنا تھا کہ وہ 60 ملین ڈالر کی لاگت سے ایسے پلانٹ لگائیں گے جن کی مدد سے گندگی اور کوڑے کو ڈیزل میں تبدیل کیا جا سکتا ہے۔تفصیلات کے مطابق جنوبی کوریا کی کمپنیوں ہیریٹج انٹرنیشنل اور K-Biz انٹرنیشنل کے اعلیٰ عہدیداروں نے پنجاب بورڈ برائے سرمایہ کاری و تجارت کے چیف ایگزیکٹو جہانزیب برانہ کے ساتھ ایک اہم ملاقات کے دوران بتایا کہ وہ جنوبی کوریا میں انتہائی کامیابی کے ساتھ 100 ٹن گندگی اور کوڑا کرکٹ کو 50 فیصد انرجی ریسورس (ڈیزل) میں تبدیل کرنے کی صلاحیت کا عملی مظاہرہ کر رہے ہیں۔ ہیریٹج انٹرنیشنل کے چیئرمین کُو مون سیوک ،وائس چیئرمین چانگ ہیوسون اور K-Biz انٹرنیشنل کے کم وون ٹیئک پر مشتمل وفد نے بتایا کہ وہ ٹائروں، پلاسٹک، درختوں، ڈرینج، ربر اور ضائع شدہ خوراک سے بخوبی ڈیزل بنانے کی صلاحیت رکھتے ہیں جو فوری طور پر قابل استعمال ہوتا ہے۔ جنوبی کوریا کے سرمایہ کاروں کو کہنا تھا کہ وہ اپنا دائرہ کار عالمی طور بڑھا رہے ہیں اور اس سلسلے میں جرمنی، کینیڈا اور سعودی عرب میں ایسے ہی پلانٹ لگانے کے مراحل سے گزر رہے ہیں۔ غیر ملکی سرمایہ کاروں نے بتایا کہ انہیں یہ پلانٹ تعمیر کرنے کیلئے 7 ہیکٹر زمین کی ضرورت ہو گی جس کے بعد چھ ماہ سے ایک سال کے عرصہ کے دوران یہ پلانٹ کام شروع کر دے گا۔سی ای او پنجاب بورڈ برا ئے سرمایہ کاری و تجارت جہانزیب برانہ نے غیر ملکی وفد کو اس سلسلے میں ہر ممکن مدد فراہم کرنے کی یقین دہانی کروائی ۔

انہوں نے جنوبی کوریا کے سرمایہ کاروں کو یہاں کاروبار کے آغاز کے حوالے سے اہم نکات سے آگاہ کیا اور کہا کہ وہ جلد از جلد اس منصوبے کا تفصیلی سٹرکچرڈ پلان اور حتمی پروپوزل جمع کروائیں تاکہ اس بہترین منصوبے کو عملی جامہ پہنایا جا سکے ۔ انہوں نے کہا کہ لاہور ویسٹ مینجمنٹ کمپنی اس سلسلے میں انتہائی مددگار ثابت ہو سکتی ہے لہٰذا ان کے ساتھ جنوبی کوریا کے سرمایہ کاروں کی ملاقات کروائی جا سکتی ہے ۔ ملاقات کے اختتام پر ایک مرتبہ پھر سی ای او نے غیر ملکی وفد کو مکمل تعاون کی یقین دہانی کروائی۔

مزید : کامرس