کاشتکار کپاس کی فی ایکڑ بہتر پیداوار کیلئے جڑی بوٹیوں کی تلفی کو یقینی بنائیں، محکمہ زراعت

کاشتکار کپاس کی فی ایکڑ بہتر پیداوار کیلئے جڑی بوٹیوں کی تلفی کو یقینی ...

لاہور(کامرس رپورٹر ) محکمہ زراعت نے کہا ہے کہ کاشتکار کپاس کی فی ایکڑ بہتر پیداوار کیلئے جڑی بوٹیوں کی تلفی کو یقینی بنائیں، جڑی بوٹیوں کے بیج اور پتے وغیرہ کپاس کی کوالٹی کو خراب کرنے میں اہم کردار اداکرتے ہیں، ترجمان کے مطابق کاشتکار کپاس کی چنائی اس وقت شروع کریں جب 50فیصد سے زیادہ ٹینڈے کھل جائیں تاکہ اعلیٰ معیار کی کپاس حاصل ہو سکے جبکہ اگیتی کاشتہ کپاس کی چھوٹے وقفوں سے چنائی کرائیں تاکہ بارشوں سے متاثرہ پھُٹی کو علیحدہ چُن کر مارکیٹ میں فروخت کیا جاسکے، انہوں نے کہا کہ آلائشوں سے پاک اور معیاری کپاس کی فراہمی سے ایک طرف کاشتکاروں کو زیادہ قیمت ملے گی۔

؂ تو دوسری طرف جننگ اور ٹیکسٹائل انڈسٹری کو بھی فائدہ ہو گا، ہماری کپاس اچھی کوالٹی کی بدولت ملکی اور غیر ملکی سطح پر تسلیم شدہ ہے ، ترجمان نے بتایا کہ کاشتکار کپاس کی فصل میں گھاس ،جڑی بوٹیوں ، پتوں اور کھوکھڑیوں وغیرہ کی آمیزش نہ ہونے دیں اور پھُٹی کو چُننے کے بعد اچھی طرح خشک کرنے کا انتظام بھی کریں،بارشوں، نقصان رساں کیڑوں سے متاثرہ اور آخری چنائی کی کچے ٹینڈوں سے حاصل ہونے والی پھُٹی کو الگ رکھیں اور علیحدہ سے فروخت کریں، انہوں نے کہا کہ آلودگی سے پاک کپاس سے کاشتکار نہ صرف بہتر قیمت حاصل کر سکتے ہیں بلکہ ملک بھی زیادہ زرِمبادلہ کما سکتا ہے اور کپاس کی اعلیٰ معیار کی حامل مصنوعات کم لاگت سے تیار کی جاسکتی ہیں۔

مزید : کامرس