شوٹر محمد شہزاد اختر پر ڈوپ ٹیسٹ مثبت آنے پر چار سال کی پابندی عائد

شوٹر محمد شہزاد اختر پر ڈوپ ٹیسٹ مثبت آنے پر چار سال کی پابندی عائد

اسلام آباد( آن لائن ) شوٹر محمد شہزاد اختر پر باکو، آذربائیجان میں ہونے والے چوتھے اسلامک سالیڈیریٹی گیمز میں ڈوپ ٹیسٹ مثبت آنے پر چار سال کی پابندی عائد کر دی گئی، ان کھیلوں میں جیتا ہوا کانسی کا تمغہ واپس لے لیا گیا۔ منگل کو اینٹی ڈوپنگ آرگنائزیشن آف پاکستان کی جانب سے بنائی گئی تین رکنی ڈسپلنری کمیٹی کا اجلاس منعقد ہوا۔

اجلاس میں ڈوپنگ کیس اور شواہد کا بغور جائزہ لیا اور ثابت ہوا کہ شوٹر محمد شہزاد اختر ممنوعہ ادویات کے استعمال میں ملوث پایا گیا۔ ڈسپلنری کمیٹی نے سفارشات پیش کیں کہ اسلامک سالیڈیریٹی گیمز، باکو، آذربائیجان (2017ء) میں جیتا گیا کانسی کا تمغہ واپس لے لیا جائے، شوٹر کو چارسال کیلئے بین کر دیا گیا ہے، کھلاڑی کی بین الاقوامی مقابلوں میں پاکستان کی نمائندگی پر پابندی ہو گی۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی