کتوں کے کاٹنے کی ویکسین نایاب ، شہری دربدربھٹکنے پر مجبور

کتوں کے کاٹنے کی ویکسین نایاب ، شہری دربدربھٹکنے پر مجبور

لاہور (جنر ل ر پو رٹر )صو با ئی دار لحکومت میں آوارہ کتے خطرناک ہوگئے، شہر میں 7 ماہ کے دوران6 ہزار 873 افراد کو آواراہ کتو ں نے کاٹ لیا، جس سے با ولے کتو ں کے کا ٹنے سے 5 شہری جان سے ہاتھ دھو بیٹھے، دوسری طر ف متاثرہ شہریوں کو شہر میں کتو ں کے کا ٹنے کے تدرا ک کے لئے واحد ہسپتال سے صرف ایک انجکشن کی فراہمی ہو ر ہی ہے ،یہ ہسپتا ل برڈ ووڈرو ڈ پر واقع ہے جہا ں کتے کے کا ٹنے کا اور علا ج کے طور پر چا ر ٹیکے فی مر یض مفت د ینے کا د وعوی ٰ کیا جا تا ہے مگر حقیقت یہ ہے کہ متا ثر ہ شخص کو طر ف کو صرف ایک ٹیکہ فرا ہم کیا جا تا ہے ، متا ثر ین باقی 3 انجکشن بازار سے خریدنے پر مجبورہیں ۔تفصیلات کے مطابق جنوری میں 890، فروری 1017، مارچ 1050، اپریل میں کتے کاٹے کے900 کیس رپورٹ ہوئے۔ مئی میں 946، جون 970 اور جولائی میں 1100 شہریوں کو کتوں نے کاٹا۔ برڈ ووڈ روڈ پرواقع محکمہ صحت کی کتے کاٹنے کی واحد علاج گاہ میں مریضوں کی بڑھتی تعداد کے باعث بجٹ کم پڑ گیا ہے۔ کتے کے کاٹنے سے گہرے گھاؤ کی صورت میں لگنے والا انجکشن مہنگا ہونے کے باعث سرے سے دستیاب ہی نہیں اور مریض 1200 روپے کا مہنگا انجکشن خود خرید رہے ہیں۔اس حوالے سے وزیر صحت خواجہ عمرا ن نذیر سے با ت کی گئی تو انہوں نے کہا کہ اس کا نو ٹس لیا جا ئے گا کو کتو ں کو تلف کر نا میٹرو پو لٹن کا ر پوریشن کی ذمہ داری ہے انہیں اپنی زمہ داری نبھا نی چا ہیے ، تا ہم محکمہ صحت نے ایسے سنٹرو ں کو وافر مقدا ر میں کتے کے کا ٹنے کی ویکسین اور ٹیکے فراہم کئے ہیں ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1