نئی نسل قائد اعظمؒ کے سنہری اصولوں پر عمل کرے،چودھری عبدالحمید

نئی نسل قائد اعظمؒ کے سنہری اصولوں پر عمل کرے،چودھری عبدالحمید

لاہور(پ ر) تحریک پاکستان کے گولڈ میڈلسٹ کارکن چودھری عبدالحمید نے کہا ہے کہ تحریک پاکستان کے دوران چلنے والی مختلف تحریکوں نے مسلمانان برصغیر میں سیاسی شعور پیدا کیااور انہیں ہندو ذہنیت سے آگاہ کیا۔ تحریک پاکستان میں نوجوانوں بالخصوص طلبہ نے بھرپور حصہ لیا۔نئی نسل قائداعظمؒ کے سنہری اصولوں پر عمل کرے،وقت کی قدر کرے اور پاکستان کی تعمیر وترقی میں اپنا کردار ادا کرے۔ ان خیالات کااظہارانہوں نے ایوان کارکنان تحریک پاکستان ،شاہراہ قائداعظمؒ لاہور میں 70ویں یومِ آزادی کی تقریبات کے سلسلے میں ’’میں نے پاکستان بنتے دیکھا‘‘ کے عنوان سے منعقدہ لیکچر کے دوران طالبات سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس لیکچر کا اہتمام نظریۂ پاکستان ٹرسٹ نے تحریک پاکستان ورکرزٹرسٹ کے اشتراک سے کیاتھا۔چودھری عبدالحمید نے کہا کہ مسلمانان برصغیر کے حقوق و مفادات کے تحفظ کیلئے 1906ء میں مسلم لیگ قائم ہوئی۔ہندو اور انگریز مسلمانوں کو الگ قوم ماننے کو تیار نہیں تھے ۔ قائداعظمؒ نے فرمایا کہ مسلمان ہر لحاظ سے ہندوؤں سے الگ قوم ہیں ۔ قائداعظمؒ کی بے لوث قیادت نے مسلمانان برصغیر کو ایک پلیٹ فارم پر متحد کردیا،آپ نے ہندوؤں اور انگریزوں کی سازشوں کا پامردی سے مقابلہ کیا۔ تحریک پاکستان میں طلبہ نے ہراول دستے کا کردار ادا کیا ، اسلامیہ کالج ،ریلوے روڈ لاہور تحریک پاکستان کا ایک مضبوط قلعہ تھا۔ 1945-46ء کے ہونیوالے انتخابات میں آل انڈیا مسلم لیگ نے قائداعظمؒ کی ولولہ انگیز قیادت میں فقیدالمثال کامیابی حاصل کی۔ان انتخابات میں مسلم لیگ کی بے مثال کامیابی نے ثابت کردیا کہ آل انڈیا مسلم لیگ ہی مسلمانوں کی واحد نمائندہ جماعت ہے۔ 14اگست 1947ء کو پاکستان دنیا کے نقشے پر ظاہر ہوا۔ بعدازاں تاریخ کی سب سے بڑی ہجرت ہوئی ، اس دوران سکھوں اور ہندوؤں نے مسلمانوں پر ظلم وستم کے پہاڑ توڑے۔چودھری عبدالحمیدنے پروگرام کے دوران تحریک پاکستان‘1945-46ء کے انتخابات اور قائداعظمؒ کو دیکھنے کے حوالے سے چشم دید واقعات بھی طالبات کو سنائے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1