حریت فورم کی شاہد الاسلام، ایاز اکبر اور فاروق ڈار کو تہاڑ جیل منتقل کرنے کی مذمت

حریت فورم کی شاہد الاسلام، ایاز اکبر اور فاروق ڈار کو تہاڑ جیل منتقل کرنے کی ...

سرینگر (اے پی پی) مقبوضہ کشمیر میں میرواعظ عمرفاروق کی زیر قیادت حریت فورم نے بھارتی تحقیقاتی ایجنسی این آئی اے کی زیر حراست حریت رہنماؤں ایڈوکیٹ شاہد الاسلام، ایاز اکبر، اور فاروق احمد ڈار کو تہاڑ جیل منتقل کرنے اور انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ کی زیر حراست سینئر حریت رہنما شبیر احمد شاہ کی اہلیہ سے پوچھ گچھ کرنے کی شدید مذمت کی ہے۔ کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق فورم کے ترجمان نے سرینگر سے جاری ایک بیان میں کہا کہ جبر و تشدد ،غیر قانونی اور غیر اخلاقی حربوں سے کشمیریوں کی جائز اور حق پر مبنی جدوجہد کو نہ ماضی میں دبایا جاسکا ہے اور نہ اب دبایا جاسکتا ہے۔انہوں نے کہاکہ انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ کی طرف سے شبیر احمد شاہ کی اہلیہ سے پوچھ گچھ کرنے کا کوئی قانونی یا اخلاقی جواز نہیں ہے کیونکہ وہ محض اپنے شوہر سے ملاقات کیلئے وہاں گئی تھیں اور کسی خاتون کو اس طرح پولیس سٹیشن میں یرغمال بنا کر اْس سے مواخذہ کرنا انسانی حقوق کے ساتھ ساتھ خواتین کے حقوق کی بھی سنگین خلاف ورزی ہے۔ترجمان نے کہا کہ بھارتی حکومت کشمیریوں کی تحریک آزادی کو بدنام اور مزاحمتی قیادت کو ہراساں کرنے کیلئے ہر غیر جمہوری اور غیر اخلاقی حربہ استعمال کررہی ہے۔

انہوں نے کہاکہ این آئی اے اور انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ کی طرف سے حریت رہنماؤں کے خلاف جاری مہم آزادی پسند قیادت پر لوگوں کے اعتبار اور اعتماد کو نقصان پہنچانے کے مذموم منصوبے کا حصہ ہے۔

مزید : عالمی منظر