قطر کی طرف سے طالبان کی مدد کے ٹھوس شواہد ہیں: سعودی عرب

قطر کی طرف سے طالبان کی مدد کے ٹھوس شواہد ہیں: سعودی عرب

کابل(آن لائن)افغانستان میں تعینات سعودی عرب کے ناظم الامور ماشری الحربی نے کہا ہے کہ قطر افغانستان میں خانہ جنگی کو ہوا دینے کے لیے طالبان اور دوسرے عسکریت پسند گروپوں کی مالی مدد کرتا رہا ہے۔ ان کے پاس قطر کی طرف سے طالبان کی مالی مدد کے ناقابل تردید شواہد موجود ہیں۔ عرب خبررساں ادارے کے مطابق سعودی ناظم الامور نے ایک بیان میں کہا کہ افغانستان میں طالبان اور خطے میں سرگرم دوسرے عسکریت پسند گروپوں کی مالی امداد قطر کی سرکاری پالیسی کا حصہ ہے۔ سعودی عرب کے پاس اس کے ٹھوس شواہد موجود ہیں۔انہوں نے کہا کہ سعودی عرب اور خلیجی ملکوں نے دہشت گردی کے مخالف موقف اختیارکرتے ہوئے افغانستان میں امن و استحکام کی پالیسی اختیار کی مگر قطر نے تحریک طالبان افغانستان کی مدد جاری رکھی۔مشاری الحربی نے کہا کہ طالبان کے حوالے سے سعودی عرب کا موقف واضح ہے۔ ہم طالبان کو افغانستان کی آئینی حکومت کا دشمن گروپ خیال کرتے ہیں۔

مزید : عالمی منظر