یمن میں القاعدہ سے لڑنے کیلئے مزید امریکی فوج کی تعیناتی

یمن میں القاعدہ سے لڑنے کیلئے مزید امریکی فوج کی تعیناتی

واشنگٹن(آن لائن)امریکی ذرائع ابلاغ میں آنے والی اطلاعات میں بتایا گیا ہے کہ وزارت دفاع پینٹا گون یمن میں القاعدہ کے خطرے سے نمٹنے کے لیے مزید فوج یمن بھجوانے کے لیے تیار ہے۔ پیش آئند ہفتوں کے دوران یمن میں القاعدہ کے خلاف لڑائی شدت اختیار کرنے کی صورت میں مزید امریکی فوجی دستے تعینات کیے جاسکتے ہیں۔میڈیا رپورٹس کے مطابق مریکی محکمہ دفاع کی طرف سے یمن میں مزید فوجی دستے بھجوانے کا عزم ایک ایسے وقت میں ظاہر کیا ہے کہ امریکا، یمنی فوج اور متحدہ عرب امارات مل کر القاعدہ کے خلاف ایک بڑا آپریشن جاری رکھے ہوئے ہیں۔امریکا کی جانب سے کہا گیا تھا کہ جزیرہ نما عرب میں القاعدہ کے یمن میں قائم مضبوط گڑھ شبوہ میں آپریشن کے لیے محدود تعداد میں فوج بھجوائی گئی ہے۔جمعہ کے روز پینٹا گون کی طرف سے جاری کردہ بیان میں کیا گیا تھا کہ یمن میں القاعدہ کے خلاف لڑائی میں یمنی فوج اور متحدہ عرب امارات کی معاونت بھی حاصل ہے۔پینٹا گون کے ترجمان کیپٹن جیو ڈیویز کے مطابق یمن میں القاعدہ کے خلاف حملے الشبو گورنری میں جاری ہیں۔ امریکا شبوہ اور یمن کے دوسرے علاقوں میں موجود القاعدہ عناصر کو مکمل طورپر تباہ کرنے کے لیے حملے جاری رکھے گا۔خیال رہے کہ امریکا یمن میں سرگرم القاعدہ کے جزیرہ نما عرب کے علاقوں کا سب سے خطرناک گروپ خیال کرتا ہے۔

مزید : عالمی منظر