پاکستان حق پر بنا اور حق کا بول بالا کرنے ہی سے متحد اور توانا ہوگا، ڈاکٹر نظام الدین

پاکستان حق پر بنا اور حق کا بول بالا کرنے ہی سے متحد اور توانا ہوگا، ڈاکٹر ...

لاہور( لیڈی رپورٹر) قومی یکجہتی کے بغیر کسی قوم کا ترقی کی شاہراہ پر گامزن ہونا ممکن نہیں۔ قومی قیادت کو میگا پراجیکٹس کی راہ میں حائل رکاوٹیں فوری دور کرنی چاہئیں۔ تعلیمی ادارے قوم کو متحد کرنے میں اہم کردار ادا کر سکتے ہیں۔امن، تحمل،عدل و انصاف اور حقوق کا پاسداری کسی بھی قوم کے اتحاد کی ضمانت ہیں۔ان خیالات کا اظہار لاہورکالج فار ویمن یونیورسٹی لاہور میں جشن آزادی کے حوالے سے منعقدہ سیمینار میں مقررین نے کیا ۔ پولیٹکل سائنس ڈیپارٹمنٹ کے زیر اہتمام قومی یکجہتی کے تقاضے کے عنوان سے منعقدہ سیمینار میں چیئرمین پنجاب ہائر ایجوکیشن کمشن ڈاکٹر نظام الدین،چیئرمین نیشنل ریفارم موومنٹ بریگیڈئر نادر علی،ریئس شعبہ سیاسیات ایف سی کالج ڈاکٹر محمد یونس، نواسہ اقبال اقبال صلاح الدین،خوشبو اعجاز اور وائس چانسلر ڈاکٹر عظمیٰ قریشی نے خطاب کیا۔

وائس چانسلر ڈاکٹر عظمیٰ قریشی نے کہا کہ تمام مذاہب امن ہی کا پیغام دیتے ہیں ۔ جب منزل ایک ہو یعنی انسانیت کی فلاح تو پھر راستے جداہونے سے فرق نہیں پڑتا۔ لاہور کالج فار ویمن یونیورسٹی میں ٹیکنالوجی اور سائنس مضامین کے ساتھ ساتھ زبان و ادب کی ترویج پر بھی بھرپور توجہ دی جارہی ہے ۔ سوشل سائنسز اور ادب انسانی روئیے بہتر بناتے ہیں۔ لاہور کالج فار ویمن یونیورسٹی نے جشن آزادی پر تقریبات کا سلسلہ شروع کر رکھا ہے جو14اگست تک جاری رہے گا۔ ہیڈ آف پولیٹکل ڈیپارٹمنٹ ڈاکٹر مبینہ علی نے کہا کہ ہفتہ تقریبات میں ہر مکتب فکر سے سکالرز کو دعوت خطاب دی گئی تاکہ طالبات کی ذہنی نمو ہو سکے۔

چئرمین پنجاب ہائر ایجوکیشن کمشن ڈاکٹر نظام الدین نے کہا کہ موضوع کے حوالے سے سیمینار بڑی اہمیت کا حامل ہے۔اس حوالے سے دو یا تین روزہ کانفرنس ہونی چاہئے۔پنجاب ہائر ایجوکیشن کمشن ایسی کانفرنس کے لئے لاہورکالج فار ویمن یونیورسٹی کی سرپرستی کرے گا۔علامہ اقبال کے نواسے اور ڈائریکٹر دبستان اقبال ریسرچ اینڈ ایجوکیشنل آرگنائزیشن اقبال صلاح الدین نے کہا کہ پاکستان کلمہ حق کے نام پر بنا تھا اور حق کا بول بالا کرنے ہی سے ترقی کرے گا اور متحد رہے گا۔چئرمین نیشنل ریفارم موومنٹ بریگیڈئر نادر علی نے کہا کہ دنیا بھر میں تازہ ترین ریسرچ رپورٹس کے مطابق پاکستان ابھرتی ہوئی معیشت ہے اور اس کی یکجہتی کو کوئی خطرات لاحق نہیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 4