پاکستانی عوام پہلی مرتبہ حقیقی معنوں میں آزادی کی خوشیاں منائیں گے : مشتاق غنی

پاکستانی عوام پہلی مرتبہ حقیقی معنوں میں آزادی کی خوشیاں منائیں گے : مشتاق ...

پشاور( سٹاف رپورٹر )خیبر پختونخوا کے مشیر برائے اعلیٰ تعلیم مشتاق احمد غنی نے کہا ہے کہ پاکستانی پہلی مرتبہ حقیقی معنوں میںآزادی کی خوشیاں منائیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ انگریزوں سے آزادی کے بعد پاکستان پر ایک کرپٹ اور ملک دشمن ٹولہ مسلط ہو گیا تھا جس نے 70 برس میں پاکستان اور اس کے عوام کو دوبارہ اندھیروں اور غلامی کی طرف دکھیل دی تھا۔ تا ہم پانامہ کیس میں پاکستان کی اعلیٰ عدلیہ نے ان کرپٹ اور ملک دشمن عناصر سے پاکستانی عوام کو نجات دلائی ہے جس کی وجہ سے ایک نئی تاریخ رقم ہوئی ہے اور پاکستانی عوام نے حقیقی معنوں میں وقت کے فرعونوں سے آزادی حاصل کر لی ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گورنمنٹ کالج آف منیجمنٹ سائنسز پشاورمیں 14 اگست کے حوالے سے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ مشتاق احمد غنی نے کالج کے پرنسپل پروفیسرثناء اللہ کی خدمات کو بھی خراج تحسین پیش کیا جن کا بیٹا آرمی پبلک سکول پشاور پر ہونے والے دہشت گردی کے حملہ میں شہید ہو گیاتھا۔ مشتاق احمد غنی نے کہا کہ صوبائی حکومت کی اصلاحات کی وجہ سے سکولوں ، کالجوں اور دیگر اداروں میں بھرتیاں میرٹ پر ہو رہی ہیں اور صوبے سے SMS اور ایزی لوڈ کے کلچر کو ختم کردیا گیا ہے ۔ انہوں نے واضح کیا کہ ملک دشمنوں نے 70 سال تک ملک کو لوٹا اور ایسی قانون سازی کی جس میں غریب عوام جاگیر داروں کی ضروریات پوری کرنے کے لئے ٹیکس ادا کرتے ہیں جبکہ سرمایہ کاروں جاگیرداروں کو ٹیکس سے چھوٹ دی جاتی ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ خیبر پختونخوا حکومت نے نئے پاکستان کے لئے بنیاد رکھ دی ہے اور4 سالوں میں 130 سے زائد قوانین پاس کر کے کرپشن، بدعنوانی اور اداروں میں سیاسی مداخلت کے تمام راستے بند کر دئے ہیں جس کی بدولت پاکستان حقیقی آزادی کی طرف بڑھ رہا ہے۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کالج کے پرنسپل پرو فیسرثناء اللہ نے کہا کہ آزادی زندہ قوموں کی نشانی ہے اور پاکستانی عوام ملک دشمن عناصر کے خلاف ایک سیسہ پلائی دیوار بن کر کھڑی رہے گی۔صوبائی حکومت کی اعلیٰ تعلیم میں کی گئی اصلاحات پر بات کرتے ہوئے پروفیسرثناء اللہ نے کہا ہے کہ صوبائی حکومت کی اصلاحات کی وجہ سے طالبعلم کثیر تعداد میں سرکاری کالجوں میں داخلہ لے رہے ہیں ۔ انہوں نے مزید واضح کیا کہ بائیومیٹرک سسٹم کی وجہ سے کالجوں میں اساتذہ کی غیر حاضری کو مکمل طور پر ختم کیا جا چکا ہے اور یہ اقدام روشن مستقبل کا ضامن ہے۔

مزید : کراچی صفحہ اول