حکومت جمہوری روایات کی بھرپور پاسداری کے وژن پر گامزن ہے: گورنر سندھ

حکومت جمہوری روایات کی بھرپور پاسداری کے وژن پر گامزن ہے: گورنر سندھ

کراچی ( اسٹاف رپورٹر) گورنر ہاؤس میں جماعت اسلامی کراچی کے وفد کے ساتھ ایک انٹر ایکٹو سیشن کا انعقاد کیا گیا جس کے دوران قومی اہمیت کے معاملات ، صوبہ کے مسائل ، بہتری کے لئے تعاون، جاری صورتحال ، کراچی کے مسائل ، وفاقی حکومت کے کراچی ترقیاتی پیکج، میگا پروجیکٹس گرین لائن ، K-IV ، بجلی کی صورتحال کے خلاف جماعت اسلامی کے احتجاج اور لیاری ایکسپریس وے اور باہمی دلچسپی کے دیگر امور پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا ۔ 2 گھنٹے سے زائد جاری رہنے والے اس سیشن سے خطاب کرتے ہوئے گورنر سندھ محمد زبیر نے کہ باہمی ربط ، مشاورت ، مذاکرات اور گفت و شنید جمہوریت کا حسن ہیں ، احتجاج جمہور کا بنیادی حق لیکن احتجاج سے مسائل حل ہونے کے بجائے اس سے عوام کو مزید دشواریوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے یہ بات بھی درست ہے کہ ہر اسٹیک ہو لڈر عوامی مفاد میں بہترسے بہتر اقدامات کو یقینی بنانے کے لئے ہر ممکن کو ششیں کرتا ہے تاکہ عوام میں اسے بھرپور پذیرائی حاصل ہو سکے جبکہ حکمراں جماعت کی بھی یہی کو شش ہوتی ہے کہ وہ زیاہ سے زیادہ عوام کے مسائل حل کرے سب کا ایک ہی نظریہ لیکن طریقہ کار میں واضح فرق ہو تا ہے ، جماعت اسلامی کی بھی دیگر سیاسی جماعتوں سمیت معاشرہ کے تمام طبقات کی طرح جمہوریت کے استحکام اور تسلسل کے لئے بے پناہ خدمات ہیں جنھیں فراموش نہیں کیا جا سکتا ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ جمہوریت کے استحکام اور تسلسل میں جماعت اسلامی نے بھی کردار ادا کیا ہے جبکہ شہر کے مسائل کے حل کے لئے جماعت اسلامی اپنی بھرپور کو ششیں کرتی رہی ہے با الخصوص پروفیسر نعمت اللہ خان کی نظامت میں شہر میں قابل قدر کام ہوئے ، جماعت اسلامی کے طویل دھرنا سے شہر میں ٹریفک کی روانی متاثر رہی جس سے عوام کو اذیت کا سامنا کرنا پڑا اس لئے دھرنا سے قبل ہی پیغام بھجوادیا تھا کہ پہلے مذاکرات سے مسئلہ حل کرائیں ۔ انہوں نے کہا کہ ہر مسئلہ کا واحد اور پر امن راستہ مذاکرات ہی ہیں ، موجودہ حکومت جمہوری روایات کی بھرپور پاسداری کے وژن پر گامزن ہے ، یہ بات خوش آئند ہے کہ ہر ایک عوامی مسائل کے خاتمہ اور خوشحال و ترقیاتی یافتہ صوبہ کا خواہاں ہے ، حکومت اور رہنماؤں کے درمیان باہمی ربط اور ہم آہنگی عوام کے وسیع تر مفاد میں ہے ۔ محمد زبیر نے کہا کہ امن و امان کے قیام کے بعد حکومت کی بھرپور توجہ معاشی خوشحالی کے ایجنڈے پر ہے ، حکومت کی معاشی پالیسی کے مثبت نتائج سب سے زیادہ کراچی سے سامنے آرہے ہیں ، غیر ملکی سرمایہ کاری میں مسلسل اضافہ ، نجی سیکٹر کے فعال کردار ، نئی نئی انڈسٹریز کے قیام اور وفاقی حکومت کے ترقیاتی منصوبوں سے شہر میں خوشحالی کے نئے دور کا آغاز ہو گیا ہے ، روزگار کے وسیع مواقعوں سے غربت کے خاتمہ میں مدد مل رہی ہے ۔ انہوں نے کہ کامیاب پالیسی کے ثمرات عام آدمی تک پہنچانے کے لئے حکومت بھرپور اقدامات کو یقینی بنا رہی ہے تاکہ اس کے اثرات عام آدمی پر واضح ہو سکیں یہی ہم سب کی اولین ترجیح بھی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت جماعت اسلامی کی مشاور ت کے دوران نشاندہی کی جانے والی خامیوں پر نہ صرف بھرپور توجہ مرکوز کرے گی بلکہ ان مسائل کے حل کے لئے ترجیحی اقدامات کو بھی یقینی بنائے گی ۔ گفتگو کے دوران جماعت اسلامی کراچی کے امیر حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ عوام کے درد کو دیکھتے ہوئے احتجاج کا راستہ اختیار کیا لیکن گورنر ہاؤس میں مذاکرات کے بعد محسوس ہوا کہ گورنر سندھ ذاتی طور پر عوامی مسائل کے حل پر یقین رکھتے ہیں ، آج کی مشاورت سے یہ یقین اور بھی پختہ ہو گیا ہے ، عوامی مسائل کے حل کے لئے جماعت اسلامی کا تعاون حکومت کے ساتھ رہے گا ۔ انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی سے عام آدمی کی توقعات ہیں اسی لئے وہ ہماری طرف دیکھتے ہیں لیکن ہم سب کا وژن عوامی فلاح و بہبود ہی ہے اس ضمن میں ہر اچھے اقدامات کی بھرپور پذیرائی بھی کرتے ہیں ، آج کے سیشن سے یقیناًعوام کے مسائل کے حل میں مدد ملے گی، ،جمہوری دور میں اس طرح کے سیشن وقت کی اہم ضرورت ہیں ، امید کرتے ہیں کہ اس طرح کے مزید سیشن بھی منعقد ہوتے رہیں گے ۔ گورنر سندھ نے کہا کہ صوبہ کی مختلف سیاسی جماعتوں ، عوامی نمائندوں اور دیگر اسٹیک ہو لڈر ز کے ساتھ باہمی مشاورت کا سلسلہ شرو ع کردیا ہے تاکہ صوبہ کے مسائل پر جامع مشاورت سے ان کے حل کے لئے حکمت عملی وضع کی جا سکے ۔

مزید : کراچی صفحہ اول