محمود خان کے نازیبا کلمات ،کمیٹی ممبران کی توہین ہوئی ،قاسم کاکا

محمود خان کے نازیبا کلمات ،کمیٹی ممبران کی توہین ہوئی ،قاسم کاکا

مٹہ سوات( نما ئندہ پاکستان )صوبائی وزیر محمود خان نے گذشتہ روز ال پارٹیز کمیٹی کے بارے میں احتجاجی جلسے کی دوران نازیبا الفاظ استعمال کرکے کمیٹی ممبران اور عہدیداروں کی توہین کی ہے ایک عوام کے منتخب نمائندے اور پھر صوبائی وزیر سے اس طرح کی باتوں کی توقع نہیں تھی جن الفاظ انہوں نے استعمال کی ہے وہ انکے شان کی مطابق نہیں ہم پر الفاظ میں مذمت کرتے ہیں گذشتہ روز مٹہ میں ہونے والے احتجاجی مظاہرے میں وعدے کی مطابق کمیٹی ممبران اور عہدیداروں نے شرکت کی تھی اور انکے موجودگی میں ایک منتخب نمائندے نے کمیٹی کے بارے میں ایسے الفاظ استعمال کی جو ایک عام ادمی بھی استعمال نہیں کرتے ان خیالات کا اظہار اتفاق ایسوسی ایشن کے تاحیات چیف ارگنائرز اور ال پارٹیز کمیٹی کے چیر مین قاسیم کاکا وائس چیر مین اور مٹہ ویلج ناظمین کمیٹی کے چیر مین اور ناظم نائبرہوڈ کونسل مٹہ خریڑئی بہادر خان ناظم نائبر ہوڈ کونسل سمبٹ مٹہ سعید احمد خان ایڈوکیٹ مٹہ بازار کے سابق صدر حاجی عبدالقیوم نثار احمد پی ایم ایل ان کے ملک نذیر احمد خان جے یو ائی کے امیر قاری رحیم اللہ تاجر یونین مٹہ تحصیل کے صدر جہان نواب خان اے این پی کے اکبر باچا مٹہ پراپرٹی ایسوسی ایشن کے صدر عمران خان پی ایم اے پی کے ییحیٰ خان پی پی پی کے عثمان غنی کیو ڈبلیو پی کے حمید خان مٹہ بازار کے محمد زوبیر درشخیلہ بازار کے صدر احسان اللہ خان جماعت اسلامی کے عبدالعزیز اور دیگر نے اپنے ایک مشترکہ اخباری بیان میں کیا انہوں نے کہا کہ مٹہ میں بجلی بحران کو ختم کرنے کیلئے ال پارٹیز کمیٹی کے کردار نہایت کامیاب رہی اور پاک فوج اپر سوات پولیس افسران اور انتظامیہ کے بھر پور تعاون سے یہ کوشش رنگ لانے والی ہے اور اس سلسلے میں ان ذمہ دار اداروں نے کمیٹی کیساتھ بھر پور تعاون کیا ہے جس پر کمیٹی ان ذمہ داروں کا شکریہ ادا کرتے ہیں انہوں نے کہا کہ گذشتہ روز مٹہ میں ہونے والے احتجاجی مظاہرے میں صوبائی وزیر محمود خان کے درخواست پر کمیٹی بھی اس احتجاج میں شریک ہوئی لیکن پتہ نہیں کہ کس وجہ سے ایک ذمہ دار عوامی منتخب نمائندے نے بازار کمیٹی کی بارے میں سٹیج سے الفاظ استعمال کئے جو ایک صوبائی وزیر کے تو دور کی بات ہے ایک عام ادمی سے بھی توقع نہیں کی جاتی ہے انہوں نے کہا کہ کمیٹی صوبائی وزیر کے ان لفاظ کی سختی سے مذمت کرتے ہیں اور کمیٹی کے کوششوں کو جو سبوتاژ کرنے کی کوشش کی گئی جاری رکھنے اور پاک فوج پولیس افسران اور مٹہ انتظامیہ سے اپنے تعاون کو جاری رکھنے کا فیصلہ کیا گیا انہوں نے کہا کہ مٹہ بازار کسی کے باپ کی نہیں بلکے ان دوکانداروں کے ہے جو دوکانوں کی کرایہ دیتے ہیں اور جب دوکانداروں نے بازار خالی کرادی تو پھر معلوم ہوگی کہ بازار کس کا ہے

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر