شدید گرمی میں سمر کیمپ کلاسسز کا آغاز بچوں کے صحت کیلئے خطرہ ہے

شدید گرمی میں سمر کیمپ کلاسسز کا آغاز بچوں کے صحت کیلئے خطرہ ہے

چارسدہ (بیورو رپورٹ) شدید گرمی میں سمر کیمپ کلاسسز کا آغاز بچوں کے صحت کیلئے خطرہ ہے ۔ شدید گرمی ، بجلی لوڈ شیڈنگ اور پانی کی قلت کی وجہ سے بچوں کو سکول بلانا دانشمندی ۔ حکومت اپنے اس فیصلے پر نظر ثانی کریں۔ایک طرف پرائیوٹ سکولوں کو زبر دستی بند کیا جا رہا ہے جبکہ دوسری طرف سرکاری سکولوں کے بچوں کو گرمی کے موسم میں سکول آنے پر مجبور کیا جا رہا ہے ۔ فیض اللہ ۔ تفصیلات کے مطابق آل ٹیچر کوآرڈنیشن کونسل کا اجلاس گورنمنٹ ہائی سکول نمبر 1میں زیر صدارت ضلعی چےئرمین فیض ا للہ منعقد ہوا۔اجلاس میں دیگر عہدیداروں عبداللہ شاہ ، میاں مطیع اللہ کے سمیت تنظیم اساتذہ کے عبدالرحمان ، محمد ناصر ، فخر عالم باچہ ، اے ٹی اے کے میاں محمد ساجد ، جواد ، مجیب الرحمان ، ملگری استاذان کے حاجی سر فراز خان ، قیصر علی ، سہیل خان ، بسم اللہ جان ، شکیل جان اور فضل رب نے شرکت کی ۔ اجلاس میں ایک قرارداد کے ذریعے حکومت سے مطالبہ کیا کہ اساتذہ کو ماہ اگست کا کنونس الاؤنس ادا کیا جائے بصورت دیگر چارسدہ کے اساتذہ شدید احتجاج پر مجبور ہونگے ۔انہوں نے کہاکہ شدید گرمی میں سمر کیمپ کلاسسز کا اجراء حیران کن ہے ۔ سمر کیمپ کلاسسز کا آغاز بچوں کے صحت کیلئے کسی خطرے سے کم نہیں ۔ بجلی لوڈ شیڈنگ اور پانی کی قلت کی وجہ سے بچوں کو سکول بلانا کوئی عقل مندی اور دانشمندی نہیں۔ حکومت اپنے فیصلے پر نظر ثانی کرکے بچوں کی زندگی داؤ پر نہ لگائیں۔انہوں نے کہاکہ ایک طرف پرائیوٹ سکولوں کو زبر دستی بند کیا جا رہا ہے جبکہ دوسری طرف سرکاری سکولوں کے بچوں کو گرمی کے موسم میں سکول آنے پر مجبور کرنا سمجھ سے بالا تر ہے ۔ اجلاس میں اے ٹی سی سی کے سرپرست اعلی اور ضلعی جنرل سیکرٹری سید منظور باچا نے بھی حصوصی شرکت کی ۔

 

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر