جی ٹی روڈ پر کل 16 حلقے ، 15 ن لیگ کے پاس

جی ٹی روڈ پر کل 16 حلقے ، 15 ن لیگ کے پاس
جی ٹی روڈ پر کل 16 حلقے ، 15 ن لیگ کے پاس

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور( ویب ڈیسک)سابق وزیراعظم نواز شریف نااہلی کے بعد پہلی بار بذریعہ جی ٹی روڈ لاہور آئیں گے ، جی ٹی روڈ پر واقع 16 قومی اسمبلی کے حلقوں میںسے 15 حکمران جماعت ن لیگ کے پاس ہیں۔ صرف ایک اپوزیشن کے رکن چودھری پرویز الہٰی ہیں۔

جی ٹی روڈ پر بھرپور منصوبہ بندی سے کیا جانے والا پہلا جلوس ہو گا۔ 280کلو میٹر کا یہ فاصلہ اگر 48 گھنٹے میں طے ہو تو پانچ کلو میٹر فی گھنٹہ فاصلہ طے کیا جائے گا، جبکہ 86 ءمیں محترمہ بے نظیر بھٹو کے قافلے نے 750 میٹر فی گھنٹہ سفر کیا، جو کہ اب تک ریکارڈ تصور کیا جاتا ہے۔ پاکستان کی سیاسی تاریخ میں احتجاج ریکارڈ کرانے کیلئے ریلیوں، جلسوں ، لانگ مارچ اور ٹرین مارچ کو ہمیشہ سے ہی اہمیت حاص رہی ہے۔ پاکستان بننے کے بعد مسلم لیگ قیوم کے سربراہ قیوم خان نے جی ٹی روڈ پر ایک بڑے جلوس کی قیادت کی، 1958ءمیں ہونے والے اس جلوس کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ یہ 58 میل لمبا تھا۔ ایوب خان کے دور میں محترمہ فاطمہ جناح نے مشرق اور مغربی پاکستان میں ٹرین مارچ کیا اور صدارتی مہم چلائی۔

بابری مسجد کی جگہ رام مندر تعمیر کردیا جائے، شیعہ وقف بورڈ نے بھارتی سپریم کورٹ میں حلف نامہ جمع کرادیا

معاہدہ تاشقند کے بعد ذوالفقار علی بھٹو کے ٹرین مارچ کو تاریخی قرار دیا جاتا رہا ہے۔ راولپنڈی سٹیشن پر بھٹو کورخصت کرنے صرف دو افراد آئے ایک غلام مصطفی کھر اور دوسرے غلام مصطفی جتوئی لیکن جب یہ ٹرین لاہور پہنچی تو دو لاکھ افراد نے ان کا عظیم الشان استقبال کر کے ایوب حکومت کو رخصت کرنے کا عندیہ دیا۔ 10اپریل 1986 کو محترمہ بے نظیر بھٹو وطن وطن واپس آئیں تو ان کا والہانہ استقبال کیا گیا۔ لاہور شہر میں انہوں نے 14 کلو میٹر کا فاصلہ 18گھنٹے میں طے کیا، اس لحاظ سے ایک کلومیٹر کا راستہ ایک گھنٹہ 17 منٹ میں طے کیا گیا۔ آصف زرداری کی حکومت میں مسلم لگی ن نے عدلیہ بحالی کیلئے 2009ء میں لانگ مارچ کیا اور گوجرانوالہ تک آنے پر وزیراعظم یوسف رضا گیلانی نے عدلیہ بحالی کا اعلان کر دیا۔

نواز دور میں انتخابات میں دھاندلی کے الزامات پر 2014 میں عمران خان نے حکومت کے خلاف طویل دھرنا دیا اور لاہور سے راولپنڈی کی جانب مارچ شروع کیا جو انہوں نے دو دنوں میں مکمل کیا۔

مزید : لاہور