نا اہل وزیر اعظم کا قافلہ سیاسی ریلی نہیں بلکہ ’’ سیاسی جنازہ‘‘ تھا ، پشاور سے امداد نہ پہنچتی تو نواز شریف کی ریلی روانہ ہی نہ ہو پاتی:خرم نواز گنڈا پور

نا اہل وزیر اعظم کا قافلہ سیاسی ریلی نہیں بلکہ ’’ سیاسی جنازہ‘‘ تھا ، پشاور ...
نا اہل وزیر اعظم کا قافلہ سیاسی ریلی نہیں بلکہ ’’ سیاسی جنازہ‘‘ تھا ، پشاور سے امداد نہ پہنچتی تو نواز شریف کی ریلی روانہ ہی نہ ہو پاتی:خرم نواز گنڈا پور

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان عوامی تحریک کے سیکرٹری جنرل خرم نواز گنڈا پور نے کہا ہے کہ وفاقی و صوبائی وزراء سرکاری گاڑیاں،حفاظتی دستے اور ہزاروں سیکیورٹی اہلکاروں کے جھرمٹ میں نا اہل وزیر اعظم کا قافلہ سیاسی ریلی نہیں بلکہ سیاسی جنازہ تھا، سوگوار فضا میں کچھ لوگ ’’ سیاسی لاش‘‘  کو دفنانے آئے ہیں، ناا ہلی پر بھنگڑا ڈالناغیرت مندی کی علامت نہیں، پشاور سے امداد نہ پہنچتی تو نواز شریف کی ریلی لاہور کی طرف روانہ ہی نہ ہو پاتی، ریلی میں سچ بولنے والے چینلز کے رپورٹرز پر تشدد کی مذمت کرتے ہیں۔

نجی ٹی وی کے مطابق  خرم نواز گنڈا پور کا کہنا تھا کہ اسلام آباد ،راولپنڈی کے شہریوں نے نا اہل وزیر اعظم کو ہمیشہ کیلئے شہر اقتدار سے رخصت کر دیا ،نا اہل وزیر اعظم کی ریلی پر پنجاب حکومت کے سرکاری وسائل کا بے دریغ استعمال کیا گیا ،سرکاری ملازمین کی حاضری جی ٹی روڈ پر لگائی گئی، مجرم نواز شریف قوم سے معافی مانگیں ، نا اہل شخص کے استقبال پر سرکاری وسائل کے بے دریغ استعمال کی مذمت کرتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ ڈاکٹر طاہر القادری کے استقبال اور مال روڈ کے تاریخی جلسے نے سربراہ عوامی تحریک کی عوامی مقبولیت کو واضح کر دیا ، ڈاکٹر طاہر القادری کی پاکستان آمد سے کرپٹ نظام کے ایوانوں میں کپکپی طاری ہو چکی ہے ،ڈاکٹر طاہر القادری نے اپنے خطاب کے ذریعے پوری قوم کو آئین ،قانون اور جمہوریت کا درس دیا ہے جس سے عوام کا ذہن اور سوچ تبدیل ہو چکی ہے ، باریاں لگانے والوں اور مک مکا کی سیاست کا خاتمہ ہو چکا ہے ۔خرم نواز گنڈاپور کا کہنا تھا کہ 14بے گناہوں کو گولیوں سے چھلنی کرنیوالے ظالموں سے قصاص لیا جائیگا، انکا ٹھکانہ جیل اور پھانسی کا پھندا ہو گا ،  عوامی تحریک کے کارکنان نے کل کے تاریخی اجتماع میں اس عزم کا اظہار کیا ہے کہ وہ اپنے قائد کے اشارے کے منتظر ہیں،  قوم شریف برادران سے نجات چاہتی ہے ، ڈاکٹر طاہر القادری کی جدوجہد انصاف کی با لا دستی اور عوام کی خوشحالی کیلئے ہے ۔3سال سے شہدائے ماڈل ٹاؤن کا مقدمہ عدالتوں میں لڑ رہے ہیں،شہباز شریف کے اقتدار میں ہوتے ہوئے کوئی عدل نہیں ہو سکتا ۔

مزید : قومی