نواز شریف سپریم کورٹ کے فیصلے کے خلاف عوام کو اکسانے کی کوشش نہ کریں، مظلوم بن کر انہیں سیاسی شہید کا رتبہ حاصل نہیں ہوسکتا:لیاقت بلوچ

نواز شریف سپریم کورٹ کے فیصلے کے خلاف عوام کو اکسانے کی کوشش نہ کریں، مظلوم ...
نواز شریف سپریم کورٹ کے فیصلے کے خلاف عوام کو اکسانے کی کوشش نہ کریں، مظلوم بن کر انہیں سیاسی شہید کا رتبہ حاصل نہیں ہوسکتا:لیاقت بلوچ

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی پاکستان لیاقت بلوچ نے کہاہے کہ نوازشریف سپریم کورٹ کے فیصلے کے خلاف عوام کو اکسانے کی کوشش نہ کریں ،  مظلوم بن کر انہیں سیاسی شہید کا رتبہ حاصل نہیں ہوسکتا ،  پانچ ججوں پر مشتمل بنچ نے متفقہ طور پر انہیں نااہل قرار دیاہے ،  مسکین اور بھولے بن کر لوگوں کو بے وقوف نہیں بنایا جاسکتا ،  نوازشریف سپریم کورٹ کے فیصلے کوتسلیم کرکے امن سے بیٹھ جاتے تو مزید شرمندگی اور خجالت سے بچ جاتے ۔

منصورہ میں پانچ روزہ تربیت گاہ کے اختتامی سیشن سے خطاب کرتے ہوئے لیاقت بلوچ نے کہاکہ نوازشریف خود کو بلاشرکت غیرے پاکستان کا شہنشاہ سمجھتے تھے اور جمہوریت کے نام پر ملک پر بدترین خاندانی آمریت مسلط تھی ، سابق وزیراعظم اور ان کے حواریوں نے کرپشن کو انڈسٹری کی شکل دی اور آئی ایم ایف اور ورلڈ بنک سے اربوں ڈالر کا قرضہ لے کر قوم کو ان کی غلامی کی ہتھکڑیاں پہنائیں ۔ انہوں نے کہاکہ کشکول توڑنے کے دعوے داروں نے کشکول اٹھا کر پوری دنیا میں پاکستان کی عزت و توقیر کو نیلا م کیا ، نوازشریف نے اپنے دور اقتدار میں معیشت کو اپنے پاﺅں پر کھڑا ہونے کا موقع نہیں دیا اور بجٹ سازی اور معاشی پالیسیاں آئی ایم ایف کی ڈکٹیشن پر بنتی رہیں ۔ انہوں نے کہاکہ حکمران جب پھنستے ہیں تو انہیں خدا یا د آتاہے اور جب تخت اقتدار پر ہوتے ہیں تو یہ امریکہ کے اشاروں پر ناچتے ہیں، سابق وزیراعظم اپنے دور اقتدار میں سودی معیشت کے لیے کمر بستہ رہے ۔ انہوں نے کہاکہ نوازشریف کو عاشق رسول ممتاز قادری کو پھانسی دینے کی سزا ملی ہے ، یہ گستاخان رسول کی حفاظت اور عاشقان رسول ﷺ  کو پھانسیاں دیتے ہیں ، انہوں نے نریندر مودی کی دوستی کو ہمیشہ کشمیریوں پر فوقیت دی ۔

لیاقت بلوچ نے کہاکہ غربت ، جہالت ، بدامنی اور لوڈشیڈنگ کے اندھیرے حکمرانوں کے تحفے ہیں ،جماعت اسلامی کی احتساب سب کا تحریک جاری رہے گی ، احتساب کی گاڑی نوازشریف کے گھر کے سامنے کھڑی نہیں ہونی چاہیے ۔، ہمارا مطالبہ ہے کہ سابقہ حکومتوں کا بھی مکمل حساب کتاب کیا جائے اور جس جس نے قومی خزانہ لوٹا ہے اس سے پائی پائی وصول کی جائے ۔ انہوں نے کہاکہ آئندہ انتخابات سے قبل انتخابی اصلاحات کو نافذ کروانے اور دینی قیادت کو متحد کرنے کے لیے ہماری کوششیں جار ی رہیں گی۔

مزید : لاہور