انتخابی دھاندلی عوام کی امیدوں اور خواہشات پر پانی پھیر دیتی ہے، سراج الحق

انتخابی دھاندلی عوام کی امیدوں اور خواہشات پر پانی پھیر دیتی ہے، سراج الحق

کوئٹہ (این این آئی)امیر جماعت اسلامی پاکستان سنیٹرسراج الحق نے کہا ہے کہ بلوچستان کو آئینی معاشی حقوق دیناوقت کی اہم ضرورت ہے صوبے میں تعلیم وصحت اور روزگارکے مسائل کی بوجہ سے عوام بالخصوص نوجوان پریشان ہیں پینے کا صاف پانی نہ صرف کوئٹہ بلکہ صوبہ بھر کا بڑامسئلہ بن گیا ہے،انتخابی دھاندلی کی وجہ سے عوام کی امیدوں وخواہشات پر پانی پھیر دیا جاتا ہے، روزگار کو فروخت کرنے کی وجہ سے اہل وپڑھے لکھے نوجوان مایوسی کا شکار ہیں منتخب نمائندے اور حکومت اپنے منشور پر عمل کریں ،سی پیک منصوبے میں بلوچستان کی ترقی وخوشحالی کو اہمیت دینا ہوگا سانحہ 8اگست کو دو سال مکمل ہوئے مگرذمہ داران کا تعین نہیں ہوسکتا اورنہ ہی انصاف فراہم کیا گیا بلوچستان کو بدامنی نے بہت زیادہ متاثر کیا ہے۔ انہوں نے دورہ کوئٹہ کے دوران جماعت اسلامی کے صوبائی ذمہ داران ،جے آئی یوتھ کے ذمہ داران ،جماعت اسلامی کوئٹہ کے ذمہ داران کے الگ الگ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔اس موقع پر لیاقت بلوچ ، محمداصغر،مولانا عبدالحق ہاشمی ، ہدایت الرحمان بلوچ ، ڈاکٹر محمد ابراہیم ،زاہدا ختر بلوچ ،مولانا محمد عار ف دمڑ، مولانا عبدالحمیدمنصوری،افتخارا حمد کاکڑ،عبدالولی خان شاکر ، جمیل احمدمشوانی ،میر ڈاکٹر نعمت اللہ ،حافظ نورعلی ودیگر ذمہ داران بھی موجودتھے ۔سراج الحق، لیاقت بلوچ ،مولانا عبدالحق ہاشمی ودیگر نے خطاب میں مزید کہا کہ وفاق کو بلوچستان کی ترقی وخوشحالی ،امن وروزگار کے حوالے سے ذمہ داری اداکرنی ہوگی صوبے میں حکومتوں کی تبدیلی کیساتھ عوام کی حالت ومعاشی صورتحال نہیں بدلتی جو مناسب نہیں ۔حکومتی غفلت وکوتاہی کی وجہ سے عوام کے مسائل میں کمی کے بجائے اضافہ ہورہا ہے ۔حکومت نے اگر عوام مسائل حل کرنے پر توجہ دی ، مدینہ جیسی ریاست کے قیام ،قرضوں سے قوم کو نجات دلانے ،عدل وانصاف کی فراہمی کی جانب پیش رفت کی تو ہم حکومت کا ساتھ دیں گے بصورت دیگر ہم احتجاج کریں۔

سراج الحق

مزید : صفحہ آخر