طالبہ بداخلاقی کیس‘ لیگی ایم پی اے عطاء الرحمن کیخلاف مقدمہ درج

طالبہ بداخلاقی کیس‘ لیگی ایم پی اے عطاء الرحمن کیخلاف مقدمہ درج

  

ملتان (وقائع نگار‘خبر نگار خصوصی)بہاالدین زکریا پولیس نے طالبہ کو بداخلاقی کانشانہ بنانے کے الزام مسلم لیگ ن کے ایم پی اے عطا الرحمان کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ہے مقدمہ سرکار کی مدعیت میں درج کیا گیا ہے تفصیل کے مطابق شاہدرہ لاہور کی رہائشی طالبہ (س) نے علاقہ مجسٹریٹ کی عدالت میں دی گئی درخواست میں موقف اختیار کیاتھا کہ وہ ملازمت اور تعلیم کے سلسلے میں ملتان آئی تھی و(بقیہ نمبر60صفحہ7پر)

ہ عطائالرحمان کی این جی او میں ملازمت کرتی تھی عطاالرحمان نے اس سے بداخلاقی کی اور اس کی ویڈیو بنا لی وہ اس ویڈیو کے ذریعے اسے بلیک میل کرکے گیارہ ماہ تک مبینہ بداخلاقی کانشانہ بناتا رہادرخواست میں الزام لگایا گیا ہے کہ 26جون 2019کو عطاالرحمان نے اسے شالیمار کالونی بلاکر بداخلاقی کا نشانہ بنایا اس نے ملزم کے خلاف کارروائی کے لئے تھانہ زکریا کو درخواست دی مگر پولیس نے کوئی کارروائی نہیں کی طالبہ نے یہ درخواست 17جولائی کو علاقہ مجسٹریٹ کو دی جبکہ 25جولائی 2019کو طالبہ (س) نے ایک بیان حلفی میں کہا ہے کہ بعض عناصر نے اس پر دباو ڈال کر اس سے یہ درخواست دلوائی تھی ان افراد کا کہنا تھا کہ درخواست میں ایسی تحریر لکھی جائے جس سے عطاالرحمان کی ساکھ کو نقصان پہنچے وہ عطاالرحمان کے خلاف کو ئی بھی قانونی کارروائی نہیں کروانا چاہتی ذرائع کا کہنا ہے کہ ملزم ایم پی اے عطا الرحمان نے کارروائی سے باز رہنے کے لئے طالبہ پر دباو ڈالا اس کے علاوہ بھار ی رقم دیے جانے کی اطلاعات بھی سامنے آئیں تاہم سوشل میڈیا پر طالبہ اور عطا الرحمان کے تعلقات کی ویڈیو وائرل ہونے کے بعد پولیس نے ملزم کے خلاف مقدمہ درج کر لیا پولیس ترجمان کے مطابق عطاالرحمان ولد نذیر کے خلاف دفعہ 365/377/376کے تحت مقدمہ نمبر 19/758درج کیا گیا ہے طالبہ نے الزام لگایا کہ ملزم عطا الرحمان تعلیمی ادارہ بنا کر معصوم طالبات کو اپنی ہوس کانشانہ بناتا ہے۔

طالبہ بداخلاقی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -