انگریزی سے اردو تراجم پر مشتمل لالہ صحرائی کی تحریریں ”منزل سے قریب“ شائع ہو گئیں 

انگریزی سے اردو تراجم پر مشتمل لالہ صحرائی کی تحریریں ”منزل سے قریب“ شائع ...

  

لاہور(پ ر) ممتاز صاحب طرز ادیب اور نعت گو چودھری محمد صادق المعروف لالہ صحرائی کے تراجم پر مشتمل افسانوں اور سفر ناموں کا مجموعہ ”منزل سے قریب“ شائع ہو گیا ہے، ان کے یہ تراجم ان کی ابتدائی زندگی کی کاوش ہیں ٹالسٹائی، موپساں، الفریڈ ہیلر، مریم جمیلہ، علامہ محمد اسد اور دوسرے ادیبوں کے یہ تراجم اتنی رواں اور شستہ اردو میں لکھے ہوئے ہیں کہ ان پر اصل کا گمان ہوتا ہے۔ لالہ صحرائی کے ترجمے کی خوبی یہ ہے کہ وہ مصنف کی تحریر کے دائرے کے اندر رہ کر بامحاورہ ترجمہ کرتے ہیں اور حدود سے باہر نکل کر چوکے چھکے نہیں مارتے، ترجمے میں اردو زبان کا محاورہ اور روزمرہ پیش نظر رکھتے ہیں اور ساتھ ہی اصل تحریر کا حسن کسی صورت مجروح نہیں ہونے دیتے۔ موپساں کے افسانوں ”دو گز زمین“ اور ”بہن“ میں جگہ جگہ اردو کی نادر ترکیبیں اس سلیقے سے استعمال ہوئی ہیں کہ جنہوں نے ان افسانوں کو انگریزی میں پڑھا ہے وہ بھی اس سے ”قندمکرر“ کا مزہ لیتے ہیں، علامہ محمد اسد کے سفر ناموں میں بھی یہی کیفیت ہے، لالہ صحرائی فاؤنڈیشن اس سے پہلے ان کے نعت کے مکمل ”کلیات“ ”نگارشات لالہ صحرائی“ کے عنوان سے ان کی نثری تحریریں اور ان کی یادمیں لکھے جانے والے مضامین ”یاد نامہ“، ”لالہ صحرائی“ اور ”تذکرۂ لالہ صحرائی“ کے نام سے شائع کر چکی ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -