احتساب عدالت سعدرفیق کی بغیر اجازت اسمبلی اجلاس میں شرکت پر برہم،جوڈیشل ریمانڈ میں 12روز کی توسیع

  احتساب عدالت سعدرفیق کی بغیر اجازت اسمبلی اجلاس میں شرکت پر برہم،جوڈیشل ...

  

لاہور(نامہ نگار)احتساب عدالت میں ییراگون سکینڈل کیس میں گرفتار مسلم لیگ (ن) کے ایم این اے خواجہ سعد اور ان کے بھائی ایم پی اے خواجہ سلمان رفیق پرفرد جرم عائد نہ ہوسکی،دوران سماعت فاضل جج نے خواجہ سعد رفیق کو بغیراجازت اسمبلی اجلاس میں پیش کرنے پربرہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے سارا نظام کیسے بائی پاس کرنا شروع کردیاہے؟بتایا جائے حکومت نے عدالتی کاروائی کو چلنے دینا ہے یا نہیں؟نیب نے کس اختیار کے تحت عدالتی اجازت کے بغیر ملزم کو اسمبلی اجلاس میں پیش کیا؟ایک کلرک ٹائپ آدمی عدالت کو لکھتا ہے کہ ملزم کو پیش کریں،عدالت کا مذاق اڑانا بند کیا جائے، گزشتہ روز احتساب عدالت کے جج جواد الحسن کی عدالت میں جوڈیشل ریمانڈ مکمل ہونے پرخواجہ سلمان رفیق کو عدالت پیش کیا گیا، سماعت شروع ہوئی توخواجہ سعد رفیق کے کیل نے بتایا کشمیر ایشو پر خواجہ سعد رفیق اسمبلی اجلاس میں شریک ہوئے،سپیکر کے پروڈکشن آرڈر پر خواجہ سعد کو اسمبلی اجلاس میں شرکت کے لئے لے جایاگیا، خواجہ سعد کو پیش نہ کرنے پر عدالت نے برہمی کااظہار کیا،عدالت نے استفسار کیا کیا پروڈیکشن آڈر ملزم کی مرضی سے جاری ہوتے ہیں؟کیا سپیکر عدالت کو حکم دے سکتی ہے کہ ملزم کو لازمی بھیجا جائے؟کیا سپیکر طریقہ کار نظرانداز کر کے پروڈکشن آرڈر جاری کرسکتے ہیں؟عدالت نے خواجہ سعد اورخواجہ سلمان رفیق کے جوڈیشل ریمانڈ میں 12روز کی توسیع کرتے ہوئے دونوں بھائیوں کو 20 اگست کو دوبارہ پیش کرنے کا حکم دیاہے۔

شرکت،برہمی

مزید :

صفحہ آخر -