پاکستان باہمی تجارت منقطع اور سفارتی تعلقات محدود کرنے کے فیصلے پر نظر ثانی کرے: بھارت

پاکستان باہمی تجارت منقطع اور سفارتی تعلقات محدود کرنے کے فیصلے پر نظر ثانی ...

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک،نیوز ایجنسیاں) بھارت نے کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے کے رد عمل میں اپنے سفیر کو ملک چھوڑنے کے فیصلے پر پاکستان سے نظر ثانی کی اپیل کردی۔بھارتی ویب ذرائع ابلاغ پر شائع رپورٹس کے مطابق بھارتی دفتر خارجہ کی جانب سے درخواست کی گئی ہے کہ اسلام آباد نئی دہلی کے ساتھ تجارتی تعلقات منقطع کرنے اور سفارتی تعلقات محدود کرنے پر نظر ثانی کرے۔بھارتی دفتر خارجہ نے کہا ہے کہ پاکستان کی جانب سے اٹھائے گئے اقدامات سے دنیا کو پیغام جائے گا کہ دونوں ممالک کے دوطرفہ تعلقات انتہائی نازک حالات سے دوچار ہیں۔بھارتی دفتر خارجہ کا یہ بھی کہنا تھا کہ آرٹیکل 370 کی منسوخی بھارت کا اندونی معاملہ ہے اور یہ ہمیشہ خودمختار معاملہ ہی رہے گا۔بھارتی دفتر خارجہ نے اپنی حکومت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر سے متعلق کیے گئے فیصلے پر انوکھی منطق پیش کی اور کہا کہ حکومت کا فیصلہ جموں و کشمیر میں ترقی کے مواقع بڑھانے کا عزم ہے۔دوسری جانببھارت نے پاکستان میں اپنے ڈپٹی ہائی کمشنر گوروو اہلووالیا کی رخصت منسوخ کرکے واپس اسلام آباد بھیج دیا۔بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر نئی دہلی میں تھے، ہائی کمشنر اجے بساریہ کو واپس بھیجنے کے پاکستان کے فیصلہ کے بعد گوروو اہلووالیا بھارتی ہائی کمیشن کی سربراہی کریں گے۔

بھارت

مزید :

صفحہ اول -