بھارت کشمیر کی قانونی حیثیت تبدیل کر نے سے باز رہے: سیکرٹری جنرل اقوام متحدہ

      بھارت کشمیر کی قانونی حیثیت تبدیل کر نے سے باز رہے: سیکرٹری جنرل اقوام ...

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) اقوام متحدہ نے بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت آرٹیکل 370کے خاتمے پر انتہائی تشویش کا اظہار کیا ہے۔اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انونیو گوتریس نے مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارت ایسے اقدام سے باز رہے جس سے جموں وکشمیر کی قانونی حیثیت متاثر ہوتی ہے۔اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل نے کہا کہ بھارتی زیر تسلط کشمیر میں اٹھائے جانے والے اقدامات کے باعث خطے میں انسانی حقوق کا المیہ جنم لے سکتا ہے۔ انہوں نے پاکستان اور بھارت سے کشیدگی میں کمی لانے کا مطالبہ کیا۔انونیو گوتریس نے بھارت کو واضح پیغام دیا ہے کہ مقبوضہ کشمیر کا حل اقوام متحدہ کے چارٹر اور سلامتی کونسل کی قراردادوں کے ذریعہ ممکن ہے۔ سیکرٹری جنرل کے ترجمان سٹیفن ڈوجیریک نے روزانہ کی بریفنگ میں صحافیوں کو بتایا کہ اقوام متحدہ کے سربراہ نے 1972ء کا شملہ معاہدہ یاد کروایا ہے جس میں کہا گیا کہ جموں و کشمیر کی حتمی حیثیت کا تعین پرامن ذرائع سے اقوام متحدہ کے چارٹر  اور سلامتی کونسل کے عین مطاق کیا جائے گا۔ سیکرٹری جنرل گوئیٹرس نے مقبوضہ کشمیر میں عائد کی گئی پابندیوں پر بھی تشویش کا اظہار کیا جس سے علاقہ بھر میں انسانی حقوق کی صورتحال گھمبیر ہو سکتی ہے۔ انہوں نے اس ضمن میں مقبوضہ کشمیر میں مواصلاتی رابطے کاٹنے اور سکول بند کئے جانے کا حوالہ بھی دیا۔ ترجمان ڈوجیریک سے اس موقع پر صحافیوں نے کشمیر کے حوالے سے سوالات کی بھرمار کر دی جس پر انہوں نے سیکرٹری جنرل کے بیان کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ عالمی ادارہ کے سربراہ کو کشمیر کی صورتحال پر تشویش ہے اور انہوں نے فریقین پر زور دیا ہے کہ وہ صبر و تحمل سے کام لیں۔ کشمیر کی صورتحال کے تناظر میں اقوام متحدہ کے رابطوں   کے بارے میں بارے سوال کے جواب میں ترجمان نے کہا کہ یو این سیکرٹریٹ نیویارک میں پاکستان اور  بھارت  کے مستقل مشنز سے رابطوں میں ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا خط موصول ہو گیا ہے اور اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی دستاویز کے طور پر سرکولیٹ کر دیا گیا ہے۔۔ انہوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر کے انسانی حقوق کی خلاف وزیوں پر تشویش ہے، فریقین تحمل کا مظاہرہ کریں اور کوئی بھی ایسا قدم اٹھانے سے گریز کریں جس سے جموں وکشمیر کی حیثیت پر کوئی فرق پڑے۔

 سیکرٹری جنرل

مزید :

صفحہ اول -