ن لیگی رہنماوں کی آج ایک ساتھ پیشیاں،سکیورٹی انتظامات سخت 

ن لیگی رہنماوں کی آج ایک ساتھ پیشیاں،سکیورٹی انتظامات سخت 

  

لاہور (کرائم رپورٹر) لاہور کی ٹرائل عدالتوں میں آج مسلم لیگ ن کے بڑے رہنماوں کی پیشیاں ایک ساتھ ہونے کی وجہ سے سکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے ہیں، مریم نواز، یوسف عباس، حمزہ شہباز، شہباز شریف، رانا ثنا اللہ کے ساتھ ساتھ تحریک انصاف کے رہنما سبطین خان بھی عدالتوں کے روبرو پیش ہونگے۔ تفصیلات کے مطابق لاہور کی ٹرائل عدالتوں میں بڑی بڑی پیشیاں ہیں، آج ایک ہی دن میں مسلم لیگ ن کے بڑے بڑے رہنما عدالتوں کے سامنے پیش ہو نگے۔ نیب کی جانب سے چوہدری شوگر مل کیس میں گذشتہ روز گرفتار کی گئیں مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کو احتساب عدالت پیش کیا جائے گا اور انکے جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی جائے گی جبکہ ان کے کزن اور سابق وزیراعظم نواز شریف کے بھیتجے یوسف عباس کو بھی آج ہی مریم نواز کے ہمراہ احتساب عدالت میں پیش کیا جائے گا۔ احتساب عدالت میں ہی آج رمضان شوگر ملز کیس کی بھی سماعت ہو گی جس میں نامزد ملزم پنجاب اسمبلی میں قائد حزب اختلاف حمزہ شہباز کو نیب کی جانب سے پیش کیا جائے گا جو آمدن سے زائد اثاثہ جات اور منی لانڈرنگ کے کیس میں نیب کی تحویل میں ہیں۔ اسی کیس (رمضان شوگر ملز کیس) میں نامزد دوسرے ملزم اور سابق وزیر اعلی پنجاب شہباز شریف کو بھی آج عدالت نے طلب کر رکھا ہے۔ مسلم لیگ ن پنجاب کے صدر رانا ثناء اللہ کو بھی آج انسداد منشیات کی عدالت پیش کیا جائے گا جنہیں جوڈیشل ریمانڈ ختم ہونے پر جیل حکام کی جانب سے عدالت کے روبرو پیش کیا جائے گا۔ تحریک انصاف کے رکن صوبائی اسمبلی اور سابق وزیر سبطین خان کا کیس بھی آج احتساب عدالت میں سماعت کے لیے مقرر ہے۔ ان تمام سیاسی رہنماوں کی عدالتوں میں پیشی کے موقع پر پولیس کی جانب سے سکیورٹی کے خصوصی اور کڑے انتظامات کئے جائیں   گے۔ پولیس ذرائع کے مطابق جوڈیشل کمپلیکس جہاں یہ عدالتیں قائم ہیں، سے ملحقہ سٹرکوں پر پولیس کی بھاری نفری اور اینٹی رائٹ فورس کے دستے تعینات کرنے سمیت سڑکوں کو کنٹینرز،  خاردار تاریں اور رکاوٹیں لگا کر بند رکھا جائے گا اور سیکرٹریٹ چوک سے ایم اے او کالج تک لوئر مال کی دونوں سڑکوں کی ٹریفک کو متبادل راستوں کی جانب موڑ دیا جائے گا۔ مسلم لیگ ن نے اپنی اعلی قیادت کی پیشیوں کے موقع پر لیگی کارکنوں کو جوڈیشل کمپلیکس کے باہر سیکرٹریٹ چوک میں پہنچنے کی کال دے رکھی ہے۔ 

 رہنماوں کی پیشیاں 

مزید :

صفحہ اول -