پوری قوم کشمیریوں کی پشت پر ہے، اسکے بغیر پاکستان نامکمل ہے: سراج الحق

پوری قوم کشمیریوں کی پشت پر ہے، اسکے بغیر پاکستان نامکمل ہے: سراج الحق

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)جماعت اسلامی پاکستان کے امیر سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ آج کراچی کی خواتین نے بھی سڑکوں پر نکل کر اور کشمیری خواتین اور عوام سے بھرپور اظہار یکجہتی کر کے ثابت کردیا ہے کہ پوری پاکستانی قوم کشمیریوں کی پشت پر ہے،کشمیر کے بغیر پاکستان نامکمل ہے،کراچی سے چترال تک قوم کو منظم کریں گے، یہ کسی زمین کے حصول کی لڑائی نہیں اسلام اور نظریے کی جنگ ہے، یہ ایک طویل جنگ ہے اپنے حوصلوں کو بلند رکھناہوگا،پاکستان عوام نے بنایا تھا اور عوام ہی اس کا تحفظ کریں گے، امید ہے کہ بھارت کے اندر ایک اور پاکستان بنے گا اورمقبوضہ کشمیرمیں آزادی کا سورج ضرورطلوع ہوگا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے جماعت اسلامی حلقہ خواتین کے تحت نیو ایم اے جناح روڈ پر کشمیر میں مظلوم نہتے کشمیریوں پر بھارتی جارحیت اور کالے قانون کے تحت آرٹیکل 370،35اے کو ختم کرکے کشمیریوں کے حقوق سلب کرنے کے خلاف خواتین کے ایک بڑے احتجاجی مظاہرے سے آڈیوخطاب کرتے ہوئے کیا۔ مظاہرے سے امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن، نائب امیر کراچی ڈاکٹر اسامہ رضی، ڈپٹی سکریٹری کراچی یونس بارائی و دیگرنے بھی خطاب کیا۔ مظاہرے میں جماعت اسلامی حلقہ خواتین پاکستان کی مرکزی جنرل سکریٹری دردانہ صدیقی، ناظمہ کراچی اسماء سفیر و دیگر خواتین ذمہ داران سمیت مختلف شعبہ ہائے زندگی سے وابستہ خواتین نے بڑی تعداد میں شرکت کی اور مقبوضہ کشمیر میں جاری بھارتی جارحیت کے خلاف شدید غم و غصے کا اظہار کیا۔ خواتین مظاہرین نے ہاتھوں میں بینرز اور پلے کارڈز اٹھائے ہوئے تھے جن پر تحریر تھا کہ کشمیر بنے گا پاکستان، کشمیریوں سے رشتہ کیا لاالہ الا اللہ، کشمیر کی جدوجہد آزادی کو سلام، پوری قوم مظلوم اہل کشمیر کے ساتھ ہے، کشمیر پاکستان کی شہ رگ ہے، کشمیر کاسودا نامنظور، کشمیر میں بھارتی ریاستی دہشت گردی،کہاں ہے اقوام متحدہ؟۔سینیٹر سراج الحق نے جماعت اسلامی حلقہ خواتین کوعظیم الشان مظاہرے کے انعقادپر مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہاکہ کراچی مظاہرے میں ماؤں، بیٹیوں اور بہنوں نے شریک ہوکر مظلوم کشمیریوں کو مزید حوصلہ دیا ہے، مقبوضہ کشمیر کو اس وقت جیل خانہ بنادیا گیا ہے، وہاں کے تعلیمی ادارے اور ہستپال بند کردیے گئے ہیں، چوک، چوراہوں اور گھروں پر فوج کھڑی ہے اورمکمل طور پر کرفیولگادیا گیا ہے،بھارتی درندوں نے ماؤں کے سامنے ان کے بچوں کو ذبح کیا اور ان کی بیٹیوں کی عصمت دری کی لیکن افسوس ہے کہ ساری دنیا اس پر خاموش ہے، بد قسمتی سے جتنے بھی پاکستان کے حکمران آئے سب نے انڈیا سے اچھے تعلقات بنانے کی کوشش کی لیکن بھارت نے کبھی مثبت رویے کا اظہار نہیں کیااور اب ثابت کردیا ہے کہ بھارت کشمیر کو متنازع نہیں سمجھتا اور اس کے نزدیک اقوام متحدہ کی قراردادیں اور عالمی اداروں کی کوئی حیثیت نہیں۔حکمرانوں نے ذہنی طورپر ایل او سی کو تسلیم کرلیا ہے، میں سلام پیش کرتاہوں ان شیر دل کشمیریوں کو جنہوں نے بد ترین ریاستی جبر و تشدد کے باوجود آزادی کی تحریک اورجدوجہد کو جاری رکھا اورایک دن کے لیے بھی بھارت کی غلامی اور تسلط کو قبول نہیں کیا۔ انہوں نے کہاکہ بھارت نے خود شملہ معاہدے کو توڑا ہے تو پاکستان بھی آگے بڑھ کر شملہ معاہدے کو ختم کرنے کا اعلان کرے اور اپنی فوج کو مقبوضہ کشمیر میں داخل کرے۔حافظ نعیم الرحمن نے کہاکہ آج کراچی میں مائیں، بہنیں اور بیٹیاں مظلوم کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے لیے جمع ہیں، ہماری ماؤں بہنوں کی جدوجہد سے کشمیریوں کو مزید حوصلہ ملے گا، ہم سلام پیش کرتے ہیں کشمیری ماؤں بہنوں اور بیٹیوں کو جو بھارتی ریاستی دہشت گردی کے خلاف آزادی کی تحریک کے لیے جدوجہد کررہی ہیں 

مزید :

صفحہ اول -