مہاجر اور سندھی کارڈ کا دور بیت گیا،آصف زرداری لسانی فسادات کرواکر نظروں میں آنا چاہتے ہیں:الطاف شکور

مہاجر اور سندھی کارڈ کا دور بیت گیا،آصف زرداری لسانی فسادات کرواکر نظروں میں ...
مہاجر اور سندھی کارڈ کا دور بیت گیا،آصف زرداری لسانی فسادات کرواکر نظروں میں آنا چاہتے ہیں:الطاف شکور

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاسبان ڈیموکریٹک پارٹی کے چیئرمین الطاف شکور نے کہا ہے کہ اب مہاجر اور سندھی کارڈ کا دور بیت گیا،قومی خزانے پر بے تحاشہ لوٹ مار، خوفناک منی لانڈرنگ، کرپشن اور سندھ میں گرتی ہوئی اپنی ساکھ پر پردہ ڈالنے کے لئے آصف زرداری سندھی مہاجر فساد کروا کر دوبارہ عوام کی نظروں میں آنا چاہتے ہیں،اُنہوں نے متعصبانہ بیان دے کر کروڑوں عوام کی دل آزاری کی ہے اور آگ لگانے کی کوشش کی ہے۔

پاسبان ڈیموکریٹک پارٹی کے چیئرمین الطاف شکور نے سابق صدر آصف علی زرداری کے متعصبانہ بیان پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہلاڑکانہ اور کراچی کو پتھر کے دور میں پہنچانے والا کرپٹ ترین آدمی، مودی کے نقش قدم پر چل نکلا ہے،سندھ کے عوام سیانے اوربا شعور ہیں اب وہ کسی بھی دھوکہ دہی اور سبز باغ کی سیاست میں نہیں آئیں گے،اب چہروں کی نہیں نظام کی تبدیلی آئے گی اور پاسبان ڈیموکریٹک پارٹی حقیقی تبدیلی کے اس مشن کو مکمل کرے گی۔ الطاف شکور نےکہا کہ اب لسانی کارڈ نہیں چلے گا، پنجاب میں نواز شریف اور سندھ میں زرداری کو اپنی کرپشن کو بچانے اور ملک سے فرار ہونے کے لئے عوام لسانی کارڈ استعمال نہیں کرنے دیں گے اور نہ ہی قوم اب کرپٹ لیڈروں کو’’ ہیرو‘‘ ماننے پر تیار ہو گی،سندھ کے عوام تھر کے فاقہ زدہ بچوں کی لاشیں اٹھا اٹھا کر تھک گئے ہیں ،سندھ کے سکولز ، تباہ حال سڑکیں، ویران کھیت اور آثار قدیمہ کا منظر پیش کرتے ہسپتال اپنی حالت زار چیخ چیخ کر بتا رہے ہیں کہ اب چہروں کی نہیں نظام کی تبدیلی کا سنہری وقت آگیا ہے ، پیپلز پارٹی اب بھٹو کی پارٹی نہیں رہی،یہ وڈیروںاور جاگیرداروں کی پارٹی بن کر لوٹ کھسوٹ مافیا بن چکی ہے اور بھٹو کے مشن کو فراموش کر چکی ہے۔ الطاف شکور نے کہا کہ پاسبان کا مشن ہے کہ ملک بھر کے عوام کو شہروں کی لٹیرا شاہی اور دیہاتوں کی وڈیرہ شاہی سے نجات دلانی ہے،پارلیمنٹ کو وڈیروں ، جاگیرداروں ، مافیاز کے سرپرستوں اور کرپٹ سرمایہ داروں و الیکٹ ایبلز کے چنگل سے آزاد کروا کر عام آدمی کو پارلیمنٹ میں بٹھانا ہے تا کہ ملک میں حقیقی تبدیلی رونما ہو سکے۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -