سعودی عرب کیساتھ کوئی کشیدگی نہیں،کشمیر کے معاملہ پر اہل پاکستان کی خواہش کو سمجھنا ہوگا:شاہ محمود قریشی

سعودی عرب کیساتھ کوئی کشیدگی نہیں،کشمیر کے معاملہ پر اہل پاکستان کی خواہش ...

  

 اسلام آباد (سٹاف رپورٹر،مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہاہے کہ اپوزیشن میرے بیان کا تناظر نہیں سمجھ رہی اس پر سیاسی پوائنٹ اسکورننگ کررہی ہے، اپوزیشن تقاضا کرتی ہے ہمیں کشمیر کے ایشو کو ہر مناسب فورم پر اٹھانا چاہیے،حالانکہ ہم اقوام متحدہ میں اسے ایک سال میں تین مرتبہ لے گئے، اپوزیشن کشمیر کے مسئلے کو سیاست کی نذر نہ کرے، معلوم ہے اپوزیشن کی بہت مجبوریاں ہیں، انہیں آگے بہت مواقع ملیں گے۔سعودی عرب ہمارا محسن، ہمیں احساس ہے کتنے پاکستانی وہاں ہیں اورسعودی عرب نے آڑے وقتوں میں ہمارا ساتھ دیا، ہم سرزمین حجاز کی حفاظت کیلئے اپنی جان دینے کو تیار ہیں لیکن انہیں بھی ہماری عوام کی خواہش کو ذہن میں رکھنا چاہیے۔ کووڈ کے دوران کشمیر پر منعقدہ ہماری کانفرنس میں سعودی وزیر خارجہ کی شرکت اور عمدہ باتیں مشترکہ اعلامیہ میں ریکارڈ کا حصہ ہیں۔ہم گزارش ہے اور کہتے رہیں گے مقبوضہ کشمیر پر کونسل آف فارن منسٹرز کا اجلاس مناسب فورم ہوگا۔سعودیہ کی جو اہمیت اور وزن ہے وہ بہت زیادہ ہے، اگر وہ ہمارے پلڑے میں پڑ جاتا ہے تو او آئی سی کا اجلاس مناسب ہوسکتا ہے۔سعودی عرب کیساتھ کوئی کشیدگی نہیں، تعلقات برملا اور ٹھوس ہیں اور رہیں گے۔دریں اثناء وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے آسیان کی 53 ویں سالگرہ کے موقع پر حکومت اور پاکستانی عوام کی طرف سے تنظیم کے رکن ممالک کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا ہے پاکستان آسیان ممالک کیساتھ شراکت داری کو بلندیوں کی نئی سطح پر لے جانے کیلئے پر عزم ہے۔ پاکستان اپنی ”ویژن ایسٹ ایشیاء”پالیسی کے تحت آسیان اور اس کے رکن ملکوں کیساتھ سیاسی، معاشی اور ثقافتی تعلقات کو مزید مضبوط اور مستحکم کرتا رہے گا۔ 8 اگست 1967 ء کا وہ تاریخی دن ہے جب پانچ جنوب مشرقی ایشیائی ممالک نے تعاون، اتحاد اور عدم مدا خلت کے اصولوں کی بنیاد پر مشترکہ پلیٹ فارم تشکیل دیا تھا، آج آسیان دس ممبران پر مشتمل متحرک تنظیم ہے۔ آسیان کا کمیونٹی ویژ ن2025، سیاسی تحفظ، اقتصادی اور سماجی و ثقافتی اجزاء پر مشتمل، خطے کے عوام اور معیشتوں کی بے پناہ صلاحیتوں کو مزید متحد، ہم آہنگی و استحکام کیلئے اہم پلیٹ فارم فراہم کرتا ہے۔وزیر خارجہ نے کووڈ 19 وباء سے موثر انداز میں نمٹنے پر آسیان کے رکن ملکوں کی تعریف کرتے ہوئے کہا یہ بے مثال بحران پوری انسانیت کی عظیم تر بھلائی کیلئے تعاون کو مزید مضبوط و مستحکم کرنے کا متقاضی ہے۔ پاکستان کے آسیان کے تمام ممالک کیساتھ قریبی اور دوستانہ تعلقات ہیں۔ 

شاہ محمود قریشی

مزید :

صفحہ اول -