30اگست سے پہلے ایم ایل ون کاٹینڈرہوجائیگا، شیخ رشید احمد

    30اگست سے پہلے ایم ایل ون کاٹینڈرہوجائیگا، شیخ رشید احمد

  

ملتان(نمائندہ خصوصی)وفاقی وزیر ریلویز شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ 13سال پہلے 6فروری 2007کو اللہ کے حکم سے میں نے ایم ایل ون کے پراجیکٹ پر دستخط کئے تھے۔ 13،14سال کے بعد ایکنک سے ایم ایل ون کا پراجیکٹ منظور ہو گیا جس پر میں پوری قوم اور میڈیا کو (بقیہ نمبر5صفحہ6پر)

مبارک باد پیش کرتا ہوں ان خیالات کا اظہار ریلوے ہیڈ کوارٹرز لاہور میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ وفاقی وزیر نے کہا کہ ایم ایل ون سے تقریباً2 لاکھ لوگوں کو ملازمتیں ملیں گی جب ایم ایل ون بن رہا ہو گا تو ایم ایل ٹو کی بھی اْن سے بات کریں گے۔ ایم ایل ون سے جو ٹریک فارغ ہو گا اْس کو ہم ایم ایل ٹو کے ٹریک کو بہتر کرنے کے لئے استعمال کریں گے۔ آج ہم نے ٹرینوں کے تمام پرانے سٹاپ ختم کر دیئے ہیں۔ جن پر کمانڈ اینڈ کنٹرول کی طر ف سے پابندی لگی تھی۔ ایم ایل ون ایشیاء میں سب سے پہلا پراجیکٹ ہوگا جس میں ماڈرن سگنل سسٹم ہوگا کوئی پھاٹک نہیں ہوگا اور ٹرین کی سپیڈ 160 کلومیٹر فی گھنٹہ ہوگی۔ اوربعد میں ہم اس سپیڈ کو 200 کلومیٹر فی گھنٹہ تک لے کر جائیں گے کیونکہ جتنی سپیڈ بڑھتی ہے اتنا خرچہ بڑھتاہے جتنی سپیڈ کم ہوتی ہے اتنا خرچہ کم ہوتاہے اس لیے ہم نے درمیانی سپیڈ رکھی تاکہ خزانے پر بوجھ کم پڑے۔پشاور سے کراچی کے درمیان فاصلہ انتہائی کم وقت میں طے ہوگا۔کراچی سے لاہورکے سفر کا دورانیہ 7 گھنٹے میں طے ہو سکے گا۔ ہم اس پراجیکٹ کو 6.8بلین ڈالر پر لے کر آئے ہیں۔ وفاقی وزیر ریلوے نے کہا کہ 30 اگست سے پہلے پہلے ایم ایل ون کا ٹینڈر ہوجائے گا اور اس حوالے سے میں وزیر اعظم پاکستان عمران خان سے درخواست کروں گا کہ چائنی صدر اس کا افتتاح کریں کیونکہ یہ پاکستان کا سب سے بڑا پراجیکٹ ہے۔ اصل پاکستان میں کرنے والا کام ایم ایل ون کا تھا لیکن ہم لوگ سڑکوں اور پلوں پر لگے رہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ 16 اگست سے مزید اپ اینڈ ڈاو ¿ن کی10 ٹرینیں چلانے جارہے ہیں۔ جن میں پشاور سے کراچی کے درمیان چلنے والی رحمان بابا ایکسپریس، لاہور سے فیصل آباد کے درمیان چلنے والی بدر ایکسپریس کو ملتان تک توسیع دینے جارہے ہیں تاکہ فیصل آباد کے لوگوں کو سہولت دی جاسکے۔ لاہور سے کراچی کے درمیان چلنے والی فرید ایکسپریس، حولیاں سے کراچی کے درمیان چلنے والی ہزارہ ایکسپریس اور موہنجوداڑوایکسپریس کے نام شامل ہیں۔ موہنجوداڑوایکسپریس کو کراچی تک لے کر جائیں گے تاکہ ایم ایل ٹو کے لیے بھی کوئی گاڑی ہو۔ وفاقی وزیر ریلویز نے کہا کہ پاکستان میں ایم ایل ون کا جو انقلاب آیا ہے اس کا سہرا وزیر اعظم پاکستان عمران خان اور چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ کے سر ہے کیونکہ چائنہ میں ہونے والی ہر میٹنگ میں انہوں نے ایم ایل ون کے پراجیکٹ کو اولیت دی ہے۔ یہ ابھی ابتدا ہے ٹریک ماڈرن ہوجائے یہ ماڈرن ٹریک کی بنیاد رکھی جارہی ہے۔ہم چاہتے ہیں کہ روڈ کا سارا رش ٹریک پر آ جائے کیونکہ سٹرکیں ہر دوسال بعد نئی بنتی ہے لیکن یہ ٹریک 1861میں جو بنا تھا 150سال کے بعد اس ٹریک کو ہاتھ لگایا جا رہا ہے ایم ایل ون پراجیکٹ کی منظوری اتنی بڑی فتح ہے کہ جس کا لوگوں کو اندازاہ نہیں کہ اس کے اکانومی، دفاعی اور روز گار پر کیا اثرات ہوں گے یہ وزیر اعظم پاکستان عمران خان کی حکومت کا ایک نیا سنگ میل ہوگا۔

شیخ رشید

مزید :

ملتان صفحہ آخر -