پرائیویٹ ہسپتال میں 50بائی پاس آپریشن مکمل، ٹیم خوشی سے نہال 

    پرائیویٹ ہسپتال میں 50بائی پاس آپریشن مکمل، ٹیم خوشی سے نہال 

  

  ملتان (خصو صی رپورٹر)  چوہدری پرویز الہی انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی کے سینئر ڈاکٹر نے ٹیم کے ہمراہ نجی ہسپتال میں (beating heart surgery)کے 50 بائی پاس آپریشن کامیابی سے مکمل کر لئے تفصیل کے مطابق چوہدری پرویز الہی انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی(بقیہ نمبر20صفحہ6پر)

 کے سینئر ڈاکٹر عامر فرقان نے ماہر کارڈیک سرجنز ڈاکٹر یاسر خان،ڈاکٹر کامران خان اور ڈاکٹر بریرہ سمیت دیگر ماہرین کی ٹیم کے ہمراہ نجی ہسپتال میں ایک سال کے دوران (beating heart surgery)  کے پچاس بائی پاس آپریشن کامیابی سے مکمل کر لئے ہیں،گزشتہ روز اس حوالے سے ایک تقریب کا انعقاد کیا گیا جس میں ٹیم نے ایک دوسرے کو مبارکباد دی،اس حوالے سے کارڈیک انیستھٹیسٹ ڈاکٹر عامر فرقان نے بتایا کہ بیٹنگ ہارٹ سرجری تکنیکی لحاظ سے اسلئے پیچیدہ ہے کہ اس میں مریض کے دل اور پھیپھڑوں کو بند کر کے  (heart lung machine) پر ڈالنے کی بجائے دل کو دھڑکنے دیا جاتا ہے اس دوران ماہر کارڈیک سرجن کی تو ضرورت ہوتی ہی ہے،تاہم انیستھیزیا ٹیم کے لئے یہ سرجری بہت ہی پیچیدہ ہو سکتی ہے انیستھیزیا ٹیم کا دوران سرجری مسلسل توجہ مرکوز رکھنا دھڑکتے دل کے ساتھ دیگر عوامل کو دیکھنا یقیناً ایک نہایت تھکا دینے والا عمل ہوتا ہے تاہم ملتان میں الحمد للّٰہ کارڈیک سرجنز اور کارڈیک انیستھٹیسٹ کی ایسی ٹیم موجود ہے جو دھڑکتے دل کے ساتھ بائی پاس سرجری کر سکتی ہے اور سرکاری سطح پر چوہدری پرویز الہی انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی میں بھی یہ سرجریاں کامیابی سے کی جا رہی ہیں تاہم جو مریض نجی طور پر بائی پاس کروانا چاہیں تو وہاں بھی اب یہ سہولت حاصل ہے۔

آپریشن

مزید :

ملتان صفحہ آخر -