ضلع خیبرمیں شجرکاری مہم ہلڑبازی کاشکار ، پودے اکھاڑدیئے، وزیراعلیٰ کا ذمہ داران کیخلاف کارروائی کا حکم

ضلع خیبرمیں شجرکاری مہم ہلڑبازی کاشکار ، پودے اکھاڑدیئے، وزیراعلیٰ کا ذمہ ...
ضلع خیبرمیں شجرکاری مہم ہلڑبازی کاشکار ، پودے اکھاڑدیئے، وزیراعلیٰ کا ذمہ داران کیخلاف کارروائی کا حکم

  

پشاور، خیبر(ڈیلی پاکستان آن لائن ) ضلع خیبر میں شجر کاری مہم ہلڑ بازی کا شکار ہوگئی اور مظاہرین نے لگائے گئے پودے اکھاڑ پھینکے ، یہ پودے سپاہ قبیلے کی اراضی پر لگائے گئے تھے ۔

واقعات کے مطابق ضلع خیبر تحصیل باڑہ کلین اینڈ گرین مہم کے تخت باڑہ میں محکمہ جنگلات کے تعاون سے پارلیمانی سیکرٹری سیفران و ایم این اے اقبال آفریدی نے شجرکاری مہم کا باقاعدہ آغاز کیا، تحصیل باڑہ منڈے کس کے مقام پر پودا لگا کر افتتاح کیا گیا۔

 شجرکاری مہم کی تقریب کے فوری بعد مقامی افراد نے رکن قومی اسمبلی کی جانب سے لگائے گئے پودے اکھاڑ پھینکے اور شکایت کی کہ ان کی اراضی پر زبردستی شجر کاری کر دی جاتی ہے۔ ایم این اے اقبال آفریدی کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ منڈی کس باڑہ کی اراضی مقامی افرادکی ملکیت ہے اور مقامی افراد بلا اجازت شجر کاری مہم پر ناراض تھے لیکن ان سے مذاکرات کی کوششیں کر رہے ہیں۔ اس حوالے سے ڈپٹی کمشنر محمود اسلم نے بتایا کہ منڈی کس میں شجرکاری مہم سپاہ قبیلہ کی اراضی پر کی گئی تھی، سپاہ قبیلے کی اراضی پر دوفریقین میں تنازع ہے، ایک فریق کے شجرکاری کی اجازت دینے پر دوسرے فریق نے پودے اکھاڑے، قانونی کارروائی کے لیے جائزہ لے رہے ہیں۔ دنیا نیوز کا کہنا ہے کہ  ڈی سی نےباڑہ منڈی کس میں بلین ٹری شجرکاری مہم کاافتتاح کیاتھا۔بتایا گیا ہے کہ ایک فریق نے شجرکاری کی اجازت دی لیکن دوسرے مخالفت میں آگے آگئے۔

بعدازاں  وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا نے پودے اکھاڑے جانے کا نوٹس لے لیا اور منڈی کس میں  پودے اکھاڑے جانے کے ذمہ داران کیخلاف کارروائی کا حکم دیدیا۔ محمود علی خان کا کہناتھاکہ شجر کاری مہم میں رخنہ ڈالنے والوں کو کسی صورت معاف نہیں کیا جائے گا۔ 

مزید :

قومی -