عالمی بینک میں ڈائریکٹر کی تعیناتی کیلئے سمری سرکولیٹ کیے بغیر 4 نام وزیراعظم کو ارسال،عمران خان کے کس قریبی شخص کا نام سر فہرست ہے؟تہلکہ خیز دعویٰ سامنے آ گیا

عالمی بینک میں ڈائریکٹر کی تعیناتی کیلئے سمری سرکولیٹ کیے بغیر 4 نام ...
عالمی بینک میں ڈائریکٹر کی تعیناتی کیلئے سمری سرکولیٹ کیے بغیر 4 نام وزیراعظم کو ارسال،عمران خان کے کس قریبی شخص کا نام سر فہرست ہے؟تہلکہ خیز دعویٰ سامنے آ گیا

  

 اسلام آ باد(ڈیلی پاکستان آن لائن)عالمی بینک میں پاکستان کی جانب سے ایگزیکٹو ڈائریکٹر کی تعیناتی کے لیے سمری سرکولیٹ کیے بغیر ہی وزیر اعظم عمران خان کو  چار ناموں کی فہرست بھجوادی گئی ہےجبکہ عالمی بینک میں ایگزیکٹو ڈائریکٹر کی تعیناتی کے لیے وزیراعظم کے پرنسپل سیکرٹری اعظم خان کا نام سرفہرست ہے۔

 نجی ٹی وی کےمطابق حکومت کی جانب سےعالمی بینک میں ایگزیکٹو ڈائریکٹر کےعہدے کے لیے مختلف ناموں پر غور کیا گیا جس کے بعد سمری مشہتر کیےبغیر وزیراعظم عمران خان کو 4نام بھجوا دیے گئے۔ترجمان وزارت اقتصادی امور کاکہنا تھا کہ ایگزیکٹو ڈائریکٹر ورلڈ بینک کی تعیناتی کے لیے سمری وزیراعظم کوبھجوائی جا چکی ہے،سمری میں تجویز کردہ نام ظاہر نہیں کیے جا سکتے۔   ایگزیکٹو ڈائریکٹر کی تعیناتی کے لیے وزیراعظم کے پرنسپل سیکرٹری اعظم خان کا نام سرفہرست ہے جب کہ دیگر 3 امیدواروں میں سیکرٹری خزانہ نوید کامران بلوچ، سیکرٹری اسٹیبلشمنٹ ڈویژن اعجاز منیر اور ریٹائرڈ افسر طارق باجوہ کے نام شامل ہیں۔  طارق باجوہ سیکرٹری خزانہ، چیئرمین ایف بی آر اور گورنر سٹیٹ بینک رہ چکے ہیں اور معیار کے لحاظ سے سرفہرست ہیں مگر سمری میں ان کا نام سب سے آخر میں رکھا گیا ہے۔

 عالمی بینک میں پاکستان کے نامزد ایگزیکٹو ڈائریکٹر اکتوبر میں ریٹائر ہو رہے ہیں، پاکستان نے اکتوبر تک گریڈ 22 کے حاضر سروس یا ریٹائرڈ افسر کو ایگزیکٹو ڈائریکٹر نامزد کرنا ہے۔  ایگزیکٹو ڈائریکٹر ورلڈ بینک کی تعیناتی کی سمری گریڈ 22 کے آفیشلز میں مشتہر کی جاتی ہے تاہم ذرائع کا بتانا ہے کہ اس حوالے سے کسی قسم کی سمری سرکولیٹ ہی نہیں کی گئی۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -