وہ شخص جس نے کورونا کے باوجود 7 مہینے میں 12 ہزار ارب روپے سے زیادہ کمالیے

وہ شخص جس نے کورونا کے باوجود 7 مہینے میں 12 ہزار ارب روپے سے زیادہ کمالیے
وہ شخص جس نے کورونا کے باوجود 7 مہینے میں 12 ہزار ارب روپے سے زیادہ کمالیے

  

واشنگٹن (ڈیلی پاکستان آن لائن) کورونا وائرس کی وجہ سے دنیا بھر کی معیشت پر کاری ضرب پڑی ہے، نچلا طبقہ نہ صرف بڑی تعداد میں بیروزگاری کا شکار ہوا ہے بلکہ دو وقت کی روٹی کیلئے بھی ترس گیا ہے لیکن ایسے میں دنیا کے امیر ترین افراد کی دولت میں اضافہ ہی دیکھنے میں آیا ہے۔

دنیا کے امیر ترین شخص ایمازون کے بانی جیف بیزوس نے رواں سال 72 ارب 10 کروڑ ڈالر کمائے ہیں۔ بلومبرگ کے مطابق انہوں نے یہ رقم سال کے پہلے 7 ماہ اور 9 دنوں کے دوران کمائی ہے۔ پاکستانی کرنسی کے حساب سے دیکھا جائے تو جیف بیزوس یکم جنوری سے 9 اگست 2020 تک 12 ہزار 160 ارب روپے کما چکے ہیں۔

فیس بک کے بانی مارک زکر برگ نے رواں سال اب تک 23 ارب 30 کروڑ ڈالر، ایشیا کے امیر ترین شخص مکیش امبانی نے 22 ارب ڈالر، مائیکرو سافٹ کے سابق سی ای او سٹیو بالمر نے 18 ارب 30 کروڑ ڈالر جبکہ مائیکرو سافٹ کے بانی بل گیٹس نے ساڑھے 7 ارب ڈالر کمائے ہیں۔

دوسری جانب لگژری اشیا بنانے والی کمپنی ایل وی ایم ایچ کے فرانس سے تعلق رکھنے والے سربراہ برنارڈ آرنالٹ کو لاک ڈاؤن کی وجہ سے بہت زیادہ نقصان کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ ایک وقت تھا جب وہ بل گیٹس کو پیچھے چھوڑ کر دنیا کے دوسرے امیر ترین شخص بن گئے تھے لیکن اب وہ بلومبرگ کی فہرست میں پانچویں نمبر پر آچکے ہیں۔ رواں سال اب تک انہیں 25 ارب 10 کروڑ ڈالر یعنی 4 ہزار 239 ارب روپے کا نقصان ہوا ہے۔

برنارڈ آرنالٹ کی طرح فیشن کی دنیا سے تعلق رکھنے والے ہسپانوی بزنس مین امانیکو اورٹیگا کو رواں برس 18 ارب 60 کروڑ ڈالر کا نقصان ہوا ہے۔ وہ معروف فیشن برانڈ "زارا" کے مالک ہیں۔  دنیا میں ایک بڑے سرمایہ کار کی حیثٰت سے مشہور وارن بفٹ کو اب تک 10 ارب ڈالر کا نقصان ہو چکا ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -بزنس -