حکومت اوورسیز پاکستانی سرمایہ کاروں کیلئے ون ونڈو کی سہولت قائم کرے

حکومت اوورسیز پاکستانی سرمایہ کاروں کیلئے ون ونڈو کی سہولت قائم کرے

  



 اسلام آباد (این این آئی) اسلام آباد چیمبر آف کامرس کے صدر شعبان خالد نے کہا ہے کہ اوورسیز پاکستانی ملک کا اہم سرمایہ ہیں اور ان میں سے بہت پاکستان میں سرمایہ کاری کر نے میں گہری دلچسپی رکھتے ہیں ¾ پٹواری کلچر اور دوسری رکاوٹیں ان کو پاکستان میں سرمایہ کاری کرنے سے روک رہی ہیں لہذا حکومت ہر صوبے اور مقامی چیمبرز آف کامرس میں اوورسیز پاکستانی سرمایہ کاروں کیلئے ون ونڈو کی سہولت قائم کرے تا کہ وہ آسانی کے ساتھ پاکستان میں سرمایہ کاری کر سکیں۔ایک بیان میں انہوںنے کہاکہ وزیراعظم پاکستان کی طرف سے بزنس کمیونٹی کیلئے مراعاتی پیکج کے اعلان کو سراہتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اوورسیز پاکستانیوں کو بھی حکومت پرکشش مراعات اور سہولیات فراہم کرنے پر غور کرے ۔ انہوں نے کہا کہ بعض اندازوں کے مطابق اووروسیز پاکستانیوں نے مالی سال 2008-09سے 2012-13کے دوران 55.01ارب ڈالر پاکستان میں بھیجے جس سے سرمایہ کاری کیلئے ان کی صلاحیت کا اندازہ لگایا جا سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ان کیلئے اچھی پالیسیاں بنا کر اور پرکشش مراعات فراہم کر کے حکومت اوورسیز پاکستانیوں کی طرف سے سرمایہ کاری میں خاطر خواہ اضافہ کر سکتی ہے۔ شعبان خالد نے کہا کہ حکومت اوورسیز پاکستانی سرمایہ کاروں کیلئے ون ونڈو کی سہولت قائم کر کے ایک عملی مثال قائم کرے اور ون ونڈو سہولت پر ایسے افراد کو تعینات کیا جائے جو نئی سوچ، مثبت مائنڈ سیٹ اور جدید ٹیکنالوجی کی مہارت رکھتے ہوں اور سرمایہ کاروں کو آسانی فراہم کرنے کے جذبے سے لیس ہوں۔

انہوں نے کہا کہ صوبے میں وزیراعلیٰ اور مرکز میں وزیراعظم کے دفاتر ون ونڈو سہولت کی کارکردگی کو براہ راست مانیٹر کریں تا کہ اوورسیز پاکستانیوں کو اعلیٰ معیار کی سروسز کی فراہمی یقینی بنائی جا سکے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان میں سرمایہ کاری کیلئے زمین کا حصول ایک مشکل کام ہے لہٰذا حکومت سرمایہ کاری کیلئے زمین کی خریداری کے تمام مراحل کو بھی آسان بنانے پر توجہ دے تا کہ اوورسیز پاکستانیوں سمیت دوسرے سرمایہ کار بڑھ چڑھ کر ملک میں سرمایہ کاری کر سکیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت اوورسیز پاکستانی سرمایہ کاروں کیلئے خصوصی عدالتیں قائم کرنے پر بھی توجہ دے تا کہ ان کے مقدمات کا جلد فیصلہ ممکن ہو اور انہیں بروقت انصاف فراہم ہو۔ ایسی عدالتوں کی نگرانی اعلیٰ عدلیہ کے پاس ہو تا کہ اوورسیز پاکستانیوں کے ساتھ انصاف کے تقاضے پورے ہوں۔آئی سی سی آئی کے صدر نے کہا کہ پاکستان میں حالیہ سالوں میں غیر ملکی سرمایہ کاری میں کافی کمی واقع ہوئی ہے تاہم انہوں نے امید ظاہر کہ کہ اگر حکومت مختلف مراعات اور سہولیاتی پیکیج کے ذریعے اوورسیز پاکستانیوں کو پاکستان میں سرمایہ کاری کرنے کی ترغیب فراہم کرے تو نہ صرف پاکستان میں ملکی و غیر ملکی سرمایہ کاری میں خاطر خواہ بہتری آئےگی بلکہ صنعتی سرگرمیوں کو بھی مزید فروغ ملنے سے روزگار کے نئے مواقع پیدا ہو نگے اور ملک کی ٹیکس آمدن بھی بہتر ہو گی۔

مزید : کامرس


loading...