پنجاب میں بلدیاتی انتخابات 30 جنوری کو ہوں گے، سندھ حکومت کی مارچ میں انتخابات کرانے کی تجویز مسترد، انتخابات 18 جنوری کو ہی ہوں گے، شیڈول 13 دسمبر کو جاری ہو گا: الیکشن کمیشن

پنجاب میں بلدیاتی انتخابات 30 جنوری کو ہوں گے، سندھ حکومت کی مارچ میں ...

پنجاب میں انتخابی فہرستیں منجمد، افسران کے تقرر و تبادلوں پر پابندی

پنجاب میں بلدیاتی انتخابات 30 جنوری کو ہوں گے، سندھ حکومت کی مارچ میں انتخابات کرانے کی تجویز مسترد، انتخابات 18 جنوری کو ہی ہوں گے، شیڈول 13 دسمبر کو جاری ہو گا: الیکشن کمیشن

  



اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) الیکشن کمیشن نے پنجاب میں بلدیاتی انتخابات 30 جنوری اور سندھ میں 18 جنوری کو کرانے کا اعلان کر دیا ہے، الیکشن کمیشن کا کہنا ہے کہ کسی کو سپریم کورٹ جانا ہے تو جائے، سندھ میں بلدیاتی انتخابات 18 جنوری کو ہی ہوں گے۔ الیکشن کمیشن کے مطابق پنجاب میں بلدیاتی انتخابات 30 جنوری کو ہی ہوں گے اور کاغذات نامزدگی 22 دسمبر سے 27 دسمبر تک وصول کئے جائیں گے۔ 30 دسمبر سے 4 جنوری تک کاغذات کی جانچ پڑتال کی جائے گی جبکہ 8 جنوری سے 11 جنوری تک کاغذات نامزدگی واپس لئے جا سکیں گے، 13 جنوری کو امیدواروں کی حتمی فہرست جاری کی جائے گی۔ الیکشن کمیشن سے جاری اعلامیے کے مطابق سندھ حکومت کی جانب سے بلدیاتی انتخابات سے متعلق حلقہ بندیاں اور قانونی تقاضے پورے نہ ہونے کے باعث بلدیاتی انتخابات کا شیڈول موخر کر دیا گیا ہے اور اب 13 دسمبر کو نیا شیڈول جاری ہونے کا امکان ہے۔ دوسری جانب سندھ کابینہ نے بلدیاتی انتخابات مارچ میں کرانے کی منظوری دے دی ہے اور سندھ کے وزیر اطلاعات و نشریات شرجیل میمن نے کہا ہے کہ سندھ حکومت اس حوالے سے کل الیکشن کمیشن کو خط لکھے گی جس میں بلدیاتی انتخابات مارچ میں کرانے کی استدعا کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت الیکشن کمیشن سے انتخابات کی تاریخ پر مشاورت کرے گی اور امید ہے کہ الیکشن کمیشن سندھ حکومت کی درخواست پر غور کر ے گی۔ الیکشن کمیشن نے سندھ حکومت کی تجویز ماننے سے انکار کر دیا ہے اور کہا ہے کہ سندھ میں بلدیاتی انتخابات 18 جنوری کو ہی ہوں گے جس کا شیڈول 13 دسمبر کو جاری کیا جائے گا، اگر سندھ حکومت تاریخ بڑھوانا چاہتی ہے تو سپریم کورٹ سے رجوع کرے۔ پنجاب میں بلدیاتی انتخابات کے شیڈول کا اعلان ہونے کے ساتھ ہی انتخابی فہرستیں منجمد اور 30 جنوری تک تقرر و تبادلوں پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔ الیکشن کمیشن کے مطابق وزیراعظم وزیراعلیٰ کے انتخابی حلقوں کے دوروں پر پابندی اور انتظامیہ کی جانب سے وزراءکو پروٹوکول ڈیوٹی دینے پر بھی پابندی عائد کر دی گئی ہے۔ یہ پابندی پنجاب میں بلدیاتی انتخابات کے انعقاد تک برقرار رہے گی۔ الیکشن کمیشن نے نئے کاغذات نامزدگی وصول کرنے کا نوٹیفکیشن بھی جاری کر دیا ہے جس کے مطابق ریٹرننگ افسران کو نئے کاغذات نامزدگی وصول کرنے اور چھٹی کے روز بھی دفاتر کھلے رکھنے کی ہدایت کی ہے۔ ذرائع کے مطابق پہلے فیس جمع کرانے والوں سے دوبارہ وصول نہیں کی جائے گی۔

مزید : قومی /Headlines


loading...